گاندربل میں موسلادھار بارشوں سے بھاری نقصان

گاندربل//گاندربل کے نونر اورگوٹلی باغ میں گزشتہ روز موسلادھار بارشیں ہونے کے سبب پادشاہی کنال میں پانی کی سطح بڑگئی اور کنال کا حفاظتی باندھ ڈہہ گیا جس کی وجہ سے نچلے علاقوں میں سیلابی صورتحال پیدا ہوگئی۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ پادشاہی کنال کا باندھ ٹوٹ جانے سے پانی کا تیز ریلا پائین علاقوں میں موجود بستیوں میں داخل ہوااورژپر گنڈ سے مڈل سکول نونر تک سرینگر لیہ شاہراہ کا کچھ حصہ ہی اکھڑگیا جس کے نتیجے میںدوسرے روز بھی ٹریفک کی نقل و حرکت مسدود ہوکے رہ گئی۔ادھر طغیانی آنے کے نتیجے میں، چھانہ ہار، گوٹلی باغ، سہ پورہ، وائل وڑر،ژپر گنڈ اور نونر بی میں موجود ہزاروں کنال پر مشتمل زرعی اراضی جس پردھان اورمکئی کی کاشت کی گئی تھی، مکمل طور پر تباہ ہو گئی۔سہ پورہ ،وائل وڑر،ژپر گنڈ اور نونر بی میں متعدد رہائشی مکانات میں پانی داخل ہونے سے مال اسباب کو نقصان پہنچا ۔پانی کے تیز بہاو نے بیشتر اندرونی اور ذیلی سڑکوں کے ساتھ ساتھ سرینگر کنگن شاہراہ کو بھی ژپر گنڈ سے مڈل سکول تک مکمل طور پر کھنڈرات میں تبدیل کرکے رکھ دیا جبکہ نونر گوٹلی باغ رابطہ سڑک بھی جگہ جگہ اکھڑ گئی ۔ادھر وائل وڑر گوٹلی باغ میںامتیاز احمد خان نامی شہری کے مچھلی فارم سے مچھلیاںپانی کے تیز بہاو میں بہہ گئیں اور مذکورہ شخص کو لاکھوں روپے کا نقصان ہوا۔ضلع حکام نے سنیچروار کوا ن علاقوں کا دورہ کرکے نقصان کاتخمینہ لگانے کےلئے رپورٹ بنانے کاکام شروع کیا۔اس دوران نیشنل کانفرنس کے میاں الطاف احمد،ڈی ڈی سی چیئرپرسن نزہت جبار،سابق ممبراسمبلی اشفاق جبار اور پی ڈی پی کے ضلع صدربشیراحمد میر نے لوگوں کو امداد دینے کا مطالبہ کیا ہے۔