گاندربل میںچراغ تلے اندھیرا | 3بجلی گھروں کے ہونے کے باوجود بجلی ندادرد

گاندربل// گاندربل ضلع میں برقی رو گھنٹوں غائب رہنے سے درجنوں علاقوں میں رہائش پذیر آبادی میں غم و غصہ اور ناراضگی پائی جارہی ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق ضلع گاندربل میں تین پاور ہاؤس موجود ہونے کے باوجود چراغ تلے اندھیرا چھایا ہوا ہے۔محکمہ بجلی نے جہاں بجلی کا باضابطہ شیڈول بناکر عوام الناس کو اسی ترتیب کے مطابق بجلی سپلائی فراہم کرنے کا اعلان کیا تاہم مقامی لوگوں کے مطابق محکمہ بجلی نے گاندربل میں ترتیب دیئے گئے شیڈول کی دھجیاں اڑا کر رکھ دی ہیں۔پرنگ، کچ پارہ،اکہال،نجون سمیت دیگر علاقوں کی آبادی نے محکمہ بجلی پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ شیڈول کے مطابق برقی رو فراہم کرنے میں ناکام ثابت ہورہا ہے۔مقامی شہری محمد مقبول نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ ہمارے ضلع میں تین پاور ہاؤس ہونے کے باوجود بھی گھنٹوں بجلی سپلائی سے لوگوں کو محروم رکھا جارتا ہے،جبکہ ریسوئنگ اسٹیشنوں پر مقامی ملازمین کو تعینات کیا گیا ہے جو من پسند طریقے سے پاور سپلائی فراہم کرتے ہیں اور کبھی بھی شیڈول کے مطابق برقی رو فراہم نہیں کی جاتی ہے۔اسی طرح کی شکایت بارسو، کرہامہ،ینگورہ ،بابا سالینہ،لار، چونٹھ ولی وار ،واکورہ ،بٹہ وینہ سمیت دیگر علاقوں کی مقامی آبادی کررہی ہیں کہ ترتیب دیئے گئے شیڈول کے مطابق بجلی سپلائی  فراہم نہیں کی جاتی جس کی وجہ سے لوگوں کوکافی مشکلات درپیش آرہی ہیں۔مقامی آبادی نے ضلع انتظامیہ اور محکمہ بجلی کے اعلیٰ حکام سے مطالبہ  کیا ہے کہ ضلع میں شیڈول کے مطابق برقی رو فراہم کی جائے۔