کیپیٹل ہل پر دھاوے کی پہلی سالگرہ

 نیویارک //سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اقتدار کا سورج غروب ہونے پر ان کی حمایت میں مشعتعل امریکیوں کے ہجوم کی جانب سے امریکی پارلیمنٹ کی عمارت کیپیٹل ہل پر حملے کو ایک سال مکمل ہوگیا ہے۔ سابق صدر ٹرمپ کے دور میں ہونے والے کیپیٹل ہل حملے کو یاد کرتے ہوئے امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا کہ حملہ کرنے اور واقعے کو ہوا دینے والو ں نے امریکہ اور اس کی جمہوریت کے گلے میں خنجر گھونپا۔ جوبائیڈن نے سابق صدر ٹرمپ پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سابق امریکی صدر نے 2020 کے انتخابات کے بارے میں جھوٹ کا جال بنایا اور پھیلایا ہے، ٹرمپ کی انا ان کی نظر میں امریکی جمہوریت اور آئین سے زیادہ اہمیت رکھتی ہے۔ اس موقع پر کیپیٹل ہل حملے میں مرنے والوں کی یاد میں ایوان نمائندگان میں ایک منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی گئی۔واضح رہے کہ سابق امریکی صدر ٹرمپ کے صدارت کے آخری ایام میں ان کے حامیوں نے امریکی پارلیمنٹ کی عمارت پر حملہ کیا تھا جس کی انہوں نے حمایت کی تھی جب کہ اس واقعے کے بعد ٹرمپ کو مواخذے کی تحریک کا بھی سامنا تھا جو کامیاب نہ ہوسکی۔