کھادی اینڈ ولیج بورڈ کی میٹنگ منعقد

جموں//روایتوں کی صنعتوں کی اَحیائے نو کے لئے رقومات کی فراہمی سکیم کے تحت قائم کئے گئے کلسٹروں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے متعلقہ ایجنسیوں کی یہاں ایک میٹنگ منعقد ہوئی جس میں نوڈل ایجنسی ، عمل آوری ایجنسی ، تکنیکی ایجنسی اور تعمیراتی ایجنسی شامل تھیں ۔میٹنگ  سول سیکرٹریٹ جموں میںجموںوکشمیر کے وی آئی بی کی وائس چیئرپرسن ڈاکٹر حنا شفیع بٹ کی صدارت میں منعقد ہوئی۔سکیم کوجموںوکشمیر کھادی اینڈ ولیج اِنڈسٹریز بورڈ 10کلسٹروں پر کام کر رہا ہے جن پر 25کروڑ روپے کی رقم مختص رکھی گئی ہے ۔ دوران میٹنگ جموںوکشمیر یونین ٹریٹری میں ان کلسٹروں کی موجودہ صورتحال کا مفصل جائزہ لیاگیا۔ میٹنگ میں سیکریٹری / سی ای او جموں و کشمیر کے وی آئی بی راشد احمد قادری ، ایف اے اور سی اے او جے اینڈ کے  کے وی آئی بی وویک اتری، ڈپٹی سی ای او جموں ڈویژن اور بورڈ کے دیگر متعلقہ سینئر افسران نے شرکت کی اور اس کے علاوہ ڈپٹی سی ای او کشمیر ڈویژن مظفر عبدالناصرعلاقہ بند نے بھی بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ میٹنگ میں حصہ لیا۔وائس چیئرپرسن نے تمام متعلقین کو قریبی تال میل قائم کر کے کلسٹروں کوجلد از جلد قائم ہونے کو یقینی بنانے پر زور دیا۔اُنہوں نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ باقی ماندہ کلسٹروں کی تکمیل میں سرعت لائیں اور انہیں مقررہ مدت کے اندر مکمل کریں۔دوران میٹنگ اُنہیں بتایا گیا کہ جموں کے تین مگس بانی کلسٹروں پر سول 8.95کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کئے گئے ہیں اور عوام کے نام وقف کرنے کے لئے تیار ہے ۔ چیئرپرسن کو مزید بتایا گیا کہ ان کلسٹروں کو چالو کرنے سے مقامی کاریگروں کو روزگار فراہم ہوگا اور روایتی پیشوں کی احیائے نو میں بھی مدد ملے گی۔