کچہری کے درمیان تصادم آرائی ،16زخمی

 مینڈھر//مینڈھر کے بھیرہ گاﺅں میں اس وقت 16افراد زخمی ہوگئے جب ایک معاملہ حل کرنے کیلئے بلائی گئی کچہری میں دو دوگروپوںکے درمیان تصادم آرائی ہوگئی ۔ذرائع کے مطابق محمد افسر ولد الف دین اورغلام دستگیر ولد عبدالحمید ساکن بیرہ کے درمیان چل رہے کسی معاملے کو حل کرنے کیلئے ایک کچہری رکھی گئی تھی جس دوران دونوں گروپوں کے درمیان پہلے تلخ کلامی ہوئی اور بعد میں شدید تصادم ہواجس کے نتیجہ میں سولہ افراد زخمی ہوئے جن میںسے کچھ کو شدید چوٹیں آئی ہیں ۔ایک افسر نے بتایاکہ زخمیوں کو فوری طور پر مقامی ہسپتال منتقل کیاگیاجہاں سے کچھ کو راجوری ہسپتال منتقل کیاگیاہے جبکہ باقی کا علاج مینڈھرمیں ہی چل رہاہے ۔زخمیوں کی شناخت اشفاق احمد ، طالب حسین ، محمد یاسمین ، مہناز اختر ، ولی داد ، ذوالفقار احمد ، شہناز اختر ، محمد طاہر ، رسالت علی ، رفاقت علی ، شہناز کوثر ،رخسانہ کوثر ، محمد وسیم ، محمد نوید ، شہناز اختر اور حق نواز کے طور پر ہوئی ہے جن سبھی کا تعلق مینڈھر کے بھیرہ گاﺅںسے ہے ۔بلاک میڈیکل افسر مینڈھر ڈاکٹر پرویز احمد خان کے مطابق شدید زخمی ہونے والے چھ افراد کو ضلع ہسپتال راجوری منتقل کیاگیاہے جبکہ باقی زخمیوں کا مینڈھر ہسپتال میں ہی علاج کیاجارہاہے ۔پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے ۔