کپواڑہ کی خاتون کو انصاف دلایا جائے

سرینگر//لل دید ہسپتال میں کپوارہ کی ایک حاملہ خاتون کے ساتھ پیش آئے واقعہ کے خلاف مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے گجر طبقے کے لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے مرتکب معالج کو سزا دینے کا مطالبہ کیاہے۔پریس کالونی لالچوک میں مختلف اضلاع سے آئے ہوئے گجر طبقے سے وابستہ لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے مبینہ طور پر ایک ڈاکٹر کی طرف سے لل دید اسپتال میں حاملہ خاتون کے ساتھ غفلت شعاری کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے نعرہ بازی کی۔مظاہرین نے پلے کارڈ اور بینئر بھی اٹھا رکھے تھے ۔ مظاہرین نے اس واقعے پر عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ پرنسپل میڈیکل کالج کی سربراہی میں ہونے والی تحقیقات میں مبینہ طور پر امتیازبرتا جارہا ہے۔انہوں نے کہا’’ وہ ملزم کو بچانے کیلئے امتیازی اپروچ اپنا رہے ہیں۔‘‘ انہوں نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا’’ ہم نوزائدہ کی والدہ کے ساتھ ہسپتال کی طرف سے غفلت شعاری کیلئے علیحدہ کمیٹی کی تشکیل چاہتے ہیں۔‘‘ احتجاجی مظاہرین نے سرکار پر اس معاملے میں غیر سنجیدگی اپنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے دھمکی دی کہ اگر ان کے مطالبات کو پورا نہیں کیا گیا تو وہ احتجاجی لہر چھیڑ دینگے۔احتجاجی مظاہرین بعد میں پرامن طور پر منتشر ہوئے۔