کپوارہ کے مومن آ باد آہگام اور کرالہ پورہ کے متعدد علاقوں میں بجلی کی آنکھ مچولی

کپوارہ// کپوارہ کے متعدد علاقوں میں بجلی کی عدم دستیابی کی وجہ سے عوام کوسخت مشکلات درپیش ہیں اور  لوگو ں میں محکمہ بجلی کے تئیں سخت ناراضگی پائی جا رہی ہے ۔راجواڑ کے نیو کالو نی مومن آ باد آہگام کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ جب سے وہ اس کالونی میں آباد ہوئے ہیں، تب سے یہا ں لوگو ں کے لئے بجلی کا کوئی بھی انتظام نہیں ہے جس کی وجہ سے بستی شام ہوتے ہیں گھپ اندھیرے میں ڈوب جاتی ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ اس حوالہ سے جب محکمہ بجلی کے اعلیٰ حکام سے رابطہ کیا ،تو انہو ں نے زچلڈارہ کے مضافات  نیو کالونی مومن آ باد آہگام کے لئے بجلی ٹرا نسفارمر کو منظوری دی اور اس کے لئے با ضابطہ طور کھمبے نصب کئے گئے لیکن تا حال ابھی تک ترسلی لائنو ں کو نہیں جو ڑا گیا نہ ہی بجلی ٹرانسفارمر کو نصب کیا گیا جس کی وجہ سے لوگو ں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگو ں کا یہ بھی کہنا ہے کہ محکمہ بجلی نے طویل انتظار کے بعد اگرچہ ان کی دیرینہ مانگ کو پورا کیا لیکن ابھی تک ترسلی لائنو ں کو جو ڑنے اور بجلی ٹرانسفارمر کو نصب کرنے میں ناکام نظر آرہا ہے ۔مقامی لوگو ں نے مطالبہ کیا کہ نیو کالونی مومن آ باد آہگام کو فوری طور بجلی سپلائی فراہم کریں ۔اس دوران کرالہ پورہ کے متعدد علاقوں جن میں سونتی پورہ ،بٹہ پورہ ،ٹھنڈی پورہ ،مقام ،پنزگام ،چوکی بل ،منزہ پتھرا ،مارسری ،زون ریشی اور کھنہ بل کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ ان علاقوں میں بجلی کی آنکھ مچولی سے لوگ تنگ آچکے ہیں ۔ان علاقوں کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ ان علاقوں کو کرالہ پورہ ریسونگ اسٹیشن سے بجلی فراہم کی جاتی ہے لیکن چوکی بل فیڈر اوور لو ڈ ہونے کی وجہ سے ان علاقوں میں بجلی کی آنکھ مچولی جاری ہے اور ہر 5منٹ کے بعد بجلی گل ہو جاتی ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ 8سال قبل محکمہ بجلی نے ان علاقوں کو بلاخلل بجلی سپلائی فراہم کرنے کے لئے راوت پورہ پنزگام میں ایک ریسونگ اسٹیشن تعمیر کیا جو دو سال قبل مکمل بھی ہوا لیکن تاحال مذکورہ ریسونگ اسٹیشن میں ٹرانسفارمر کو نصب نہیں کیا گیا ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ ڈی ڈی سی چیر مین کپوارہ نے چیف انجینئر کشمیر سے اس حوالہ سے ملاقات بھی کی جس کے بعد راوت پورہ ریسونگ اسٹیشن کے لئے 6میگاواٹ بجلی ٹرانسفارمر کو منظوری بھی دی گئی لیکن تاحال ٹرانسفارمر کو نصب نہیں کیا گیا جس کے نتیجے میں علاقہ میں بجلی کا سخت بحران ہے ۔مقامی لوگو ں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ چوکی بل اور اس کے مضافاتی علاقوں میں بجلی کی معقول سپلائی کو یقینی بنانے کے لئے اقدامات کریں ۔اس حوالہ سے ڈی ڈی سی چیر مین کپوارہ عرفان سلطان پنڈت پوری نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ انہو ں نے یہ معاملہ چیف انجینئر کی نو ٹس میں لایا جس کے بعد روات پورہ ریسونگ اسٹیشن کے لئے ٹرانسفارمر منظور کیا گیا لیکن موسم کی خرابی کی وجہ سے ٹرانسفارمر نصب کرنے میں دشواریا ں پیش آرہی ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ عنقریب راوت پورہ ریسونگ اسٹیشن میں 6میگاواٹ بجلی ٹرانسفارمر نصب کر کے ا سکو عوام کے نام وقف کیا جائے گا اور اس علاقہ میں لوگو ں کو بلاخلل بجلی سپلائی فراہم کی جائے گی ۔