کٹھوعہ میںبجلی کی عد م دستیابی کیخلاف احتجاج

کٹھوعہ // کانگریس کے کارکنان نے کٹھوعہ کے چڑوال علاقہ میںنائب وزیراعلیٰ اورمحکمہ بجلی کے وزیر نرمل سنگھ کو کالے جھنڈے دکھا کر احتجاجی مظاہرے کئے ۔ تفصیلات کے مطابق کٹھوعہ کے قومی شاہراہ پرچڑوال کے مقام پرکانگریس کے درجنوں کارکنا ن سڑک کے کنارے کھڑے ہوئے تھے ۔اس دوران انہوں نے  نائب وزیر اعلی کے خلاف نعرے بازی شروع کردی۔اس موقعہ پراحتجاج کی قیادت کانگریس کے ہیرانگر اسمبلی کے صدر رومی کھجوریا کررہے تھے۔اس دوران پولیس نے موقع پر پہنچ کر مظاہروں کو روکنے کی کوشش کی لیکن یوتھ  کانگریس کارکنان کو سڑک کے ایک طرف کھڑا کیا جس کے بعد نائب وزیر اعلی نے قافلے میں رکاوٹ دورکیں۔اس دوران کانگریس لیڈر رومی کھجوریا اور دلیبیر سنگھ کی گرفتاری پولیس نے عمل میں لائی اور ان دو نوجوانوں کی حراست میں لینے کے خلاف بھڑک اٹھے اور قومی شاہراہ پر دھرنا دیا جسکے بعد میں گاڑیوں کی نقل و حرکت بھی چند گھنٹوں تک معطل ہو کر رہ گئی اور احتجاجیوں نے پولیس انتظامیہ کے خلاف بھی احتجاج کیا۔اس دوران ایس ایس پی خلیل پوسوال ، ایس ڈی پی او روبیل چوہدری، SHO راج باغ سرجیت سنگھ نے موقع پر تھے ۔انہوں نے مظاہرین کو  سڑک سے ہٹا کر گاڑیوں کی نقل و حرکت کو بحال کیا گیا ۔اس دوران احتجاج کر رہے رومی کھجوریا نے کہا کہ ملک کے شہری حکومت اور انتظامیہ کی غلط پالیسیوں کے خلاف انجام دینے کا بنیادی حق رکھتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اگر ریاست میں نائب وزیر اعلی نے بجلی محکمہ کا چارج لیا ہے تو پھر وہ ریاست میں آسانی سے بجلی کے نظام کو چلانے کا فرض کیوں نہیں نبھارہے جبکہ بجلی کا اقتدار سنبھالنے کے بعد سے بجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی کی جا رہی ہے جس کی وجہ سے لوگ پریشان ہیں ۔خاص طور پر راملی رات کو تیار کی جاتی ہے ۔اس وقت بالکل روشنی نہیں ہوتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ جسکی وجہ سے لوگوں کو بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔