’ کو ویکسین‘ کے ڈیڑھ لاکھ ڈوز پہنچ گئے

 سرینگر //جموں و کشمیر میں سنیچر کو 18سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کیلئے ٹیکہ کاری مہم کا آغاز کیا گیا اور بعد دوپہر شروع کی گئی مہم کے پہلے دن  150سے زائد افراد کو کورونا مخالف ٹیکہ لگایا گیا۔ 18سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کیلئے ٹیکہ کاری مہم کا افتتاح سرینگر میں ڈپٹی کمشنر اعجاز اسد نے کیا۔انہوں نے کہا کہ کورونا مخالف ویکسین کی مانگ بڑھنے سے ویکسین کی قلت پیدا ہوئی تھی لیکن اب ہمارے پاس ویکسین کافی تعداد میں موجود ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ 18سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کیلئے 10مقامات پر ویکسینیشن پوائنٹ کھولے گئے ہیں جن میں صدر اسپتال سرینگر، سکمز صورہ ، پی ایچ سی چھانہ پورہ ،جی بھی پنتھ اسپتال، این آئی ٹی سرینگر، گورنمنٹ ہائرسیکنڈری سکول بٹہ مالو اور دیگر علاقے شامل ہیں۔ انہوں نے کہا ’’ ماہرین کہتے ہیں کہ ویکسین کورونا کے خلاف موثر ہتھیار ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ ماسک لگانا، سماجی دوری کا اہتمام کرنا اور بار بار ہاتھ دھونا لازمی ہے‘‘۔ڈی سی سرینگر نے بتایا کہ لوگوں کو پہلے سے وضع قوائد و ضوابط پر عمل کرنا چاہئے تاکہ وائرس کے پھیلائو کو روکا جاسکے۔سٹیٹ ایمونائزیشن آفیسر ڈاکٹر شاہد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ سنیچر کو بعد دو پہر جموں و کشمیر Covaxineکے 1لاکھ 50ہزار ڈوز پہنچ گئے جن میں سے 75ہزار جموں جبکہ 75ہزار کشمیر لائے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 18سال سے 54سال کے عمر کے 150افراد کو پہلے ہی دن  لگائے گئے ہیں جن میں 1500جی ایم سی جموں جبکہ کشمیر کے مختلف سینٹروں میں لگائے گئے ۔ ڈاکٹر شاہد نے بتایا کہ آنے والے دنوں میں مزید لوگوں کو ویکسین لگانے کی مہم میں مزید تیزی لائی جائے گی۔