کوڑاکرکٹ اور گندگی نے شفاف ندی کو گندہ بنا دیا

سوپور//چھانہ کھن سوپورکے لوگوں نے اتوار کوعلاقے میں نکاسی آب کے نالے کی صفائی کرنے کے مطالبے کولیکراحتجاج کیا۔لوگوں کا کہنا ہے کہ 60سالہ پرانے اس نالے میں کوڑا کرکٹ جمع ہونے سے پانی کے نکاس میں رکاوٹ پیدا ہوئی ہے اور اب اس نالے کے آلودہ پانی میں بدبوپیدا ہوئی ہے جس نے لوگوں کاجینا دوبھر کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اب اس نالے کی وہ پرانی شان بھی ختم ہوچکی ہے۔اوقاف کمیٹی چھانہ کھن کے صدر غلام محمد میر کے مطابق یہ نالہ علاقہ کی ایک بڑی کشش تھالیکن اب اس میں میلاکچیلاپانی بہتا ہے۔نالے میں کوڑاکرکٹ کے ڈھیر جمع ہوئے ہیں اور اس کا پانی پچھلے دس برسوں سے  بے حرکت وسست ٹھہراہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ پچھلے دس سال سے کسی بھی متعلقہ حاکم نے اس نالے کی صفائی کرنے کی ضرورت محسوس نہیں کی اور ناہی اس نالے میں پانی کے بلا خلل بہائوکو یقینی بنانے کیلئے کوئی قدم اُٹھایا گیا۔انہوں نے کہا کہ نالے میں جگہ جگہ کوڑاکرکٹ اور میلا کچیلا پانی ہونے کی وجہ سے یہاں بیماری پھیلنے کاخطرہ ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں خدشہ ہے کہ یہ آلودہ پانی ہمیں مشکل میں ڈالدے گا۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ درجہ حرارت میں اضافے کے ساتھ اس نالے سے بدبواُٹھتی ہے۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ اریگیشن وفلڈ کنٹرول ،میونسپل کونسل اور مقامی انتظامیہ سے کئی بار رجوع کرنے کے باوجود حکام نے اس سلسلے میں کوئی قدم نہیں اُٹھایا۔انہوں نے کہا کہ ہم ایک بار پھر حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ اس نالے کو صاف کرنے کیلئے اقدام کئے جائیں ورنہ ہم مردوزن سڑکوں پر آکر احتجاج کریں گے۔میونسپل کونسل سوپور کے ایگزیکیٹوافسر سے جب اس بارے میں استفسار کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ میں بذات خودعلاقے کادورہ کیا اور نالے کو صاف کرنے کیلئے مشینری کام پر لگائی جائے گی۔