کوٹرنکہ کے دیہی علا قوں میں رابطہ سڑکیں نا قابل استعمال

 
کوٹرنکہ//سب ڈویژن کوٹرنکہ کے دیہی علا قوں میں انتظامیہ کی جانب سے مختلف اسکیموں کے تحت تعمیر کی گئی سڑکیں نا قابل استعمال ہو چکی ہیں جبکہ سڑکوں کو صرف کٹائی تک ہی محدود رکھنے کی وجہ سے غریب عوام کی زمینوں کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع اور ریاستی انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ کوٹرنکہ کے مختلف علا قوں میں کئی سڑکیں برسوں سے زیر تعمیر ہیں جبکہ ان کی تعمیر پر کروڑوں روپے خرچ کرنے کے بعد بھی سڑکیں مکمل نہیں کی جاسکی۔انہوں نے کہاکہ ریاستی انتظامیہ کاغذات میں ریاست کے 90فیصد علا قوں کو سڑک سے جوڑا گیا ہے لیکن زمینی سطح پر صورتحال یکسر ہے جبکہ دیہی علا قوں کی تمام رابطہ سڑکیں اس وقت ناقابل استعمال ہو چکی ہیں ۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ کوٹرنکہ کے مختلف دیہی علا قوں میں محکمہ پی ایم جی ایس وائی ،نبارڈ ،آراینڈ بی ودیگر مرکزی اسکیموں کے تحت کئی علا قوں میں سڑکوں کی تعمیر کے سلسلہ میں کام شروع کیا گیا تھا لیکن کئی جگہوں پر زمین کی کٹائی کے بعد تعمیر اتی کام روک دیا گیا ہے جبکہ کچھ ایک سڑکوں کے ملحقہ علا قہ جات میں نکاسی آب نظام پوری طرح سے مفلوج ہو نے کی وجہ سے برساتی موسم شروع ہو تے ہی بارشوں کا پانی لوگوں کی زمینوں میں داخل ہو رہا ہے ۔ کوٹرنکہ سے مندرگالہ ،ساکری ،پیڑی ،گھروہٹ ،پرواڑی ،کوٹرنکہ بڈھال خواص، سموٹ،ترگایں، راتھر منڈی ،دراج ،سلٹھ ،کوٹرنکہ شاہ پور کوٹرنکہ کھاہ جمولہ ،بدھل گھبر سموٹ، زریں تا بالا سموٹ ،موڑا تکیہ،موڑا اپرکنڈی، موڑا سڑک بھنڈی جمولہ ،کھانڈلی پل ،کوٹ دھڑا ،درحال سمبلی،راجوری درحال سڑک و دیگر لنک سڑکوںکی حالت دن بدن بہتری کے بجاے ابتر ہوتی جارہی ہے۔ان رابطہ سڑکوں میں سے کچھ پر کھڈے پڑے ہوئے ہیں جبکہ دیگر سڑکوں میں اس وقت سیلابی صورتحال پیدا ہو چکی ہے ۔مقامی لوگوں نے ریاستی انتظامیہ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ سب ڈویژن کوٹرنکہ کے مختلف دیہی علا قوں میں تعمیر کی گئی سڑکوں پر خرچ کئے گئے فنڈز کی جانچ کیلئے کمیٹی تشکیل دی جائے تاکہ زمینی سطح پر ہوئے کام کے علا وہ کاغذات میں سڑکوں کی حالت کی باریک بینی سے جانچ کی جائے اور فنڈز کی خرد برد میں ملوث افراد کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ۔