کوٹرنکہ میں شعبہ صحت کا حال بے حال

کوٹرنکہ //سب ڈویژن کوٹرنکہ کے سموٹ علاقہ میں تعمیر ہورہی ’’نیو ٹائپ پرائمری ہیلتھ سنٹرسموٹ ‘‘کی عمارت گزشتہ 15برسوں سے مکمل ہی نہیں ہو سکی جس کی وجہ سے عام لوگوں کو علاقہ میں بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں خلل آیا ہے ۔مکینوں نے بتایا محکمہ تعمیر ات عامہ کی جانب سے عمارت کی تعمیر کا عمل 2007میں شروع کیا گیا تھا لیکن اس کے بعد تعمیر اتی عمل انتہائی سست رفتاری کیساتھ چلایا گیا جس کی وجہ سے ابھی تک عمارت کو مکمل نہیں کیا جاسکا ۔انہوں نے بتایا کہ اب عمارت کھنڈرات میں تبدیل ہو نا شروع ہو گئی ہے جبکہ محکمہ سے رجوع کرنے کے بعد بھی کوئی مثبت پہل نہیں کی گئی ۔مکینوں نے بتایا کہ عمارت کی تعمیر کیلئے کروڑوں روپے خرچ کئے گئے ہیں ۔نائب سرپنچ مریم بیگم نے بتایا کہ عمارت نا مکمل رہنے کی وجہ سے شعبہ صحت کے ملازمین کیساتھ ساتھ عام لوگ بھی متاثر ہورہے ہیں ۔موصوفہ نے بتایا کہ عمارت نامکمل ہونے کیساتھ ساتھ حکام کی جانب سے اس میں پانی ،بجلی و دیگر بنیادی سہولیات بھی فراہم نہیں کروائی جاسکی ہیں ۔پنچایتی اراکین نے بتایا کہ حال ہی میں ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری نے ایک عوامی دربار کے دوران بھی مذکورہ ڈھانچے کا جائزہ لیا تھا لیکن اس کے بعد بھی کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ۔مکینوں نے ضلع انتظامیہ راجوری سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ محکمہ صحت کیساتھ ساتھ عام لوگوں کو سہولیات مل سکیں ۔