کووڈمیں بھی ہندوستان کی زرعی شعبے میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ

 نئی دہلی// وزیر زراعت نریندر سنگھ تومر نے جمعرات کو کہا کہ حکومت کسانوں ، زرعی خواتین اور دیہی نوجوانوں کو نئی ٹیکنالوجی اور طریقوں کو ترقی دے کر بڑے پیمانے پر بااختیار بنائے گی۔ دوشنبے (تاجکستان) میں شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے رکن ممالک کے زراعت کے وزراء کی چھٹی میٹنگ میں اپنے ورچول خطاب میں مسٹر تومر نے کہا کہ ہندوستان میں زراعت کے شعبے نے کووڈ کے دوران بھی بہت اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ خوراک کی پیداوار کے ساتھ ساتھ برآمدات میں بھی نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جس سے عالمی غذائی تحفظ میں اہم کردار ادا کیا گیا ہے ۔ غربت اور بھوک کو ختم کرنے اور غذائی تحفظ اور غذائیت کے پائیدار ترقی کے اہداف کے حصول کے لیے ہندوستان کے عزم کی تصدیق کرتے ہوئے مسٹر تومر نے کہا کہ بائیو فورٹیفائیڈ اقسام مائیکرو نیوٹرینٹس سے بھرپور غذائیت کا ذریعہ ہیں جنہیں غذائیت سے نمٹنے کے لیے فروغ دیا جا سکتا ہے ۔ انڈین کونسل آف ایگریکلچرل ریسرچ اس کام میں مصروف ہے ۔جیسا کہ ہندوستان نے 16 اکتوبر 2020 کو فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن (ایف اے او) کے 75 سال پورے ہونے کے موقع پر وزیر اعظم نریندر مودی نے ایک یادگاری سکہ جاری کیا اور ساتھ ہی 17 بائیو ری انفورسمنٹ اقسام بھی جاری کیں۔