کولگام میں ڈی ایل آر سی میٹنگ

سرینگر// ڈسٹرکٹ دیولپمنٹ کمشنر کولگام ڈاکٹر بلال محی الدین بٹ کی صدارت میں پیر کو 31 مارچ 2021 کو سالانہ کریڈٹ پلان کے تحت بینک اور دیگر محکموںکی کارکردگی کا جائزہ لینے ڈسٹرکٹ لیول ریویو کمیٹی میٹنگ (ڈی ایل آر سی) کا انعقاد ہوا ۔میٹنگ میں چیف پلاننگ آفیسر ، لیڈ ڈسٹرکٹ منیجر ، ڈی ڈی ایم نبارڈ ، ضلعی افسران ، کلسٹر ہیڈ جے کے بینک ، دیگر بینکوں کے ڈسٹرکٹ کوآرڈی نیٹر اور دیگر عہدیداران نے شرکت کی۔لیڈ ڈسٹرکٹ  منیجر ارشد قادری نے میٹنگ میں بتایا کہ 31 مارچ 2021 کو بینکوں کے ڈپازِٹ 2069.65 کروڑ روپے تھے جو پچھلے سال کی مناسبت سے 13.68 فیصد زیادہ ہے ، جبکہ اسی مدت کے دوران قرضہ جات  15.70 فیصد اضافے کے ساتھ 1591.34 کروڑ روپے درج کئے گئے۔ ضلع کا کریڈٹ ڈپازٹ تناسب 76.89فی صد رہا جو 60 فی صد قومی بنچ مارک سے کافی اوپر تھا۔ یہ بھی انکشاف کیا گیا کہ 2020-21 کے لئے ڈسٹرکٹ سالانہ کریڈٹ پلان کے تحت 1464.40 کروڑ روپے میں سے بینکوں نےCOVID19وبائی بیماری سے متعلق پابندیوں کے باوجود 31.03.2021تک ختم ہونے والے مالی سال کے دوران 980.01 کروڑ روپے  کے قرضوں کی فراہمی کی ہے جو کہ اے سی پی ہدف کا 67 فیصد ہے۔ ایل ڈی ایم نے یہ بھی بتایا کہ ترجیحی شعبے کے تحت  795.38 کروڑ روپئے  کے قرضہ جات فراہم کرکے اے سی پی کا 58 فیصدحاصل کیا گیا ہیں جبکہ غیر ترجیحی شعبے کے تحت زیر جائزہ سال کے دوران 184.62 کروڑ روپئے قرضہ جات واگزار کئے گئے جو اے سی پی کا 84 فیصد ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ آتمانربھربھارت ابھیان کے تحت کے سی سی ایگریکلچر کے تحت 15821 اور کے سی سی اے ایچ اینڈ ایف کے تحت 5762 کیسز کی منظوری دی گئی ہے۔ اسی عرصے کے دوران ضلع میں 13947 PMSBY ،6383  PMJJBY اور787  APY رجسٹریشن ہوچکی ہیں۔ڈی ڈی سی نے سیکٹر وار کامیابیوں کا جائزہ لیتے ہوئے ، بینکوں کو زراعت ، ایم ایس ایم ای ، رہائش اور تعلیم کے شعبوں میں قرضوں کی فراہمی کو بہتر بنانے کا مشورہ دیا۔ ڈی ڈی سی نے زراعت / باغبانی کے محکموں کو بھی ہدایت کی کہ KCC کیسز کی مناسب اور بروقت کفالت کریں تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ 100 فیصد کاشتکاروں کو پوری طرح سے اس دائرے میں لایا جائے۔ڈی ڈی سی نے ضلع میں خود روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے لئے گورنمنٹ اسکیمز پی ایم ای جی پی ، آر ای جی پی ،PMSVANidhi، این آر ایل ایم ، این یو ایل ایم اور پی ایم وائے یسز کو بروقت نمٹانے کا مشورہ دیا۔فورم نے 100 فی صد ڈیجیٹائزیشن کے لئے دو دیہات کو اپنانے پر اتفاق کیا ، اور ضلع کی مالی خواندگی کو ایک نئی سطح پر لے جانے پر بھی زور دیا۔اجلاس کا اختتام ڈی ڈی آر سی / ڈی سی سی کنوینر ایل ڈی ایم کے شکریہ کے ساتھ ہوا۔