کولگام اور اونتی پورہ پلوامہ ۔ 4ملی ٹینٹوں کو اشتہاری قرار دیاگیا

 یو این آئی

سرینگر//جموں وکشمیر پولیس نے لشکر طیبہ سے وابستہ چار سرگرم ملی ٹینٹوں کے خلاف سی آر پی سی کی سیکشن 82 کے تحت اشتہاری قرار دیا۔معلوم ہوا ہے کہ چاروں سیکورٹی ایجنسیوں کو متعدد کیسوں میں انتہائی مطلوب ہے۔ پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ سٹیٹ انوسٹی گیشن یونٹ (ایس آئی یو) سرینگر نے کولگام اور اونتی پورہ پولیس ٹیموں کی مدد سے چار سرگر ملی ٹینٹوں جو کہ سیکورٹی ایجنسیوں کو کئی کیسوں میں مطلوب ہیں، کے خلاف اعلانیہ حکم جاری کیا۔

 

 

انہوں نے سرگرم ملی ٹینٹوں کی شناخت عمیس احمد وانی ولد نثار احمد وانی ساکن چولگام کولگام ، باسط احمد ڈار ولد مرحوم عبدالرشید ڈار ساکن ریڈونی کولگام ، اویس فیروز ولد فیروز احمد ساکن فرستہ بل پانپور اور مومن گلزار ولد گلزار احمد میر ساکن فردوس کالونی عید گاہ سرینگر کے بطور کی۔مذکورہ سرگرم ملی ٹینٹوں کے خلاف پانپور تھانہ میں ایف آئی آر زیر نمبر 127/2022صورہ میں 50/2022اور کوٹھی باغ تھانہ میں ایف آئی آر زیر نمبر 2/2023زیر دفعات 13,18,20,38,39یو اےپی اے ایکٹ اور 7/25آرمز ایکٹ کے تحت کیس رجسٹر ہے۔معزز عدالت نے ملزمان کو اعلان اشاعت کی تاریخ سے 30دنوں کے اندر اندر عدالت یا تفتیشی ایجنسی یا پولیس کے سامنے ہتھیار ڈالنے کا موقع دیا ہے ، ایسا نہ کرنے کی صورت میں ان کے خلاف سیکشن 83سی آر پی سی کے تحت کارروائی شروع کی جائے گی۔انہوں نے کہاکہ ہفتے کے روز یعنی نو ستمبرکو مقامی اخبارات میں اعلانیہ حکم شائع کیا گیا ہے جبکہ ملزمان کے آبائی علاقوں میں بھی اعلانیہ حکم کی کاپیاں چسپاں کی گئیں اور ملزمان کے اہل خانہ کو بھی زبانی پڑھ کر اعلانیہ سنایا گیا۔ان کے مطابق جن اخبارات میں اعلانیہ احکامات شائع کئے گئے ان کی کاپیاں بھی اہل خانہ کو فراہم کی گئیں۔موصوف ترجمان نے بتایا کہ اشتہاری قرار دئے گئے ملی ٹینٹوں کے آبائی علاقوں میں بھی اعلانیہ حکم کی کاپیاں چسپاں کئے گئے ہیں۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ جموں وکشمیر میں دہشت گردی سے متعلق متعدد کیسوں میں مذکورہ ملی ٹینٹوں کا ہاتھ رہا ہے۔ترجمان نے بتایا کہ مذکورہ ملی ٹینٹ اس وقت سرگرم ہیں اور ان کا تعلق کالعدم ملی ٹینٹ تنظیم لشکر طیبہ سے ہے۔