کوریل آسنور منزگام کولگام میں مسلح جھڑپ| 2ملی ٹینٹ جاں بحق

خالد جاوید
کولگام// دمحال ہانجی پورہ کولگام کے ایک دور افتادہ گائوں میں پیر کی شام ایک مسلح جھڑپ کے دوران 2ملی ٹینٹ جاں بحق جبکہ 2پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔مہلوک ملی ٹینٹوں میں ایک غیر ملکی بتایا گیا ہے۔پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ 2روز قبل چک صمد دمحال ہانجی پورہ میں شبانہ تصادم کے دوران جو 2ملی ٹینٹ فرار ہوئے تھے ، وہی ہلاک ہوئے ہیں۔پولیس کے مطابق پیر کی شام انہیں کوریل آسنور منزگام ( دمحال ہانجی پورہ) میں 2ملی ٹینٹوں کی موجودگی کا علم ہوا جس کے بعد یہاں محاصرہ کیا گیا۔پولیس نے بتایا کہ ملی ٹینٹ ایک میوہ باغ میں موجود تھے اور جونہی شام کے 6بجے کے قریب انہیں 9آر آر اور 34آر آر کے علاوہ 18بٹالین سی آر پی ایف کیساتھ مشترکہ طور پر گھیرے میں لینے کی کوشش کی گئی تو انہوں نے سیکورٹی فورسز پر اندھا دھند فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے درمیان گولیوں کا شدید تبادلہ ہوا جس کا دورانیہ مختصر رہا جس کے بعد فائرنگ کا سلسلہ تھم گیا اور تلاشی کارروائی کے دوران 2ملی ٹینٹوں کی لاشیں بر آمد کی گئیں۔انکی تحویل سے اسلحہ و گولہ بارود ضبط کیا گیا۔فائرنگ کے تبادلے میں پولیس کے دو اہلکار زخمی ہوئے جنہیں فوری طور پر ضلع اسپتال منتقل کردیا گیا۔تاہم مقامی لوگوں نے کہا کہ ملی ٹینٹ کسی پرائیویٹ گاڑی میں سفر کررہے تھے، جس دوران وہاں سے ایک پولیس افسر کی گاڑی جارہی تھی۔ ملی ٹینٹوں نے شک کی بنا پر گاڑی سے چھلانگ لگاکر میوہ باغ کی راہ لی، اور فائرنگ کے تبادلے میں 2پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔ جسکے ساتھ ہی یہاں گھیرا کیا گیا اور فائرنگ کے تبادلے میں دونوں ملی ٹینٹ مارے گئے۔پولیس نے بتایا کہ مہلوک ملی ٹینٹوں میں”ایک پاکستانی (عسکریت پسند) (کوڈ نام چاچا) اور ایک ہائبرڈ (عسکریت پسند) شامل ہیں۔آئی جی پی کشمیر وجے کمار نے  بتایا کہ یہ وہی گروہ تھا جو گزشتہ ہفتے چک صمد علاقے میں ایک مختصر گولی باری کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا تھا۔آئی جی پی نے مزید کہا کہ گزشتہ دو دنوں میں تین پاکستانی عسکریت پسند مارے گئے ہیں۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ شام میں مسلح تصادم کے بعد محاصرہ نہیں ہٹایا گیا اور سیکورٹی فورسز کو شبہ ہے کہ یہاں کے میوہ باغات میں کمین گاہیں موجود ہوسکتی ہیں اور 2بلڈوزرس کی خدمات بھی حاصل کی گئی ہیں۔

 

 

سوپور میں 3ملی ٹینٹ گرفتار

 اسلحہ اور گولہ بارود برآمد:پولیس

غلام محمد

 

سوپور//پولیس نے پیر کو کہا کہ انہوں نے سوپور میں لشکر طیبہ سے تعلق رکھنے والے تین ملی ٹینٹوں کو گرفتار کیا ۔پولیس نے کہا کہ وڈور بالا سے سوناروین پل تک 3 مشتبہ افراد کی نقل و حرکت کے بارے میں مخصوص اطلاع کی بنیاد پر، جن کا سیکورٹی فورسز پر حملہ کرنے کا امکان تھا، سوپور پولیس نے 22 آر آر اور 179بتالین سی آر پی ایف کے ساتھ ایک مشترکہ ناکا قائم کیا گیا تھا۔ ترجمان نے مزید بتایا کہ ناکہ پر چیکنگ کے دوران دیکھا گیا کہ تین افراد مشکوک حالت میں ناکے کی طرف بڑھ رہے تھے، ناکہ پارٹی نے ان کی مشکوک حرکت دیکھی اور بعد میں انہیں رکنے کو کہا۔تاہم مشتبہ افراد نے  فرار ہونے کی کوشش کی لیکن انہیں پکڑ لیا گیا۔ تلاشی لینے پر ان کے قبضے سے 3 پستول، 3 میگزین، پستول کے 22 راؤنڈ، 1 دستی بم اور 79,800 روپے نقد برآمد ہوئے۔ ان کی شناخت طفیل احمد میر ولد عبدالمجید میر ساکن گنڈ محلہ، باراٹھ کلاں، اویس احمد میر ولد حسن میر ساکن میر محلہ، براٹھ کلاں اور شبیر احمد وگے ولد نذیر احمد وگے ساکن مسجد محلہ، پیٹھ بگ کے بطور ہوئی ہے۔ اس سلسلے میں پولیس اسٹیشن بومئی میں قانون کی متعلقہ دفعات کے تحت ایک کیس درج کیا گیا ہے اور مزید تفتیش جاری ہے۔