کورونا کی پہلی اور دوسری لہر میں ابتک 633خواتین فوت

 سرینگر //وادی میں کورونا وائرس کی پہلی اور دوسری لہر میں مجموعی طور پر 633خواتین فوت ہوئیں۔پہلی لہر میں مارچ 2020سے مارچ 2021تک363خواتین کی اموات ہوئیں جبکہ دوسری لہر میں ابتک 270خواتین کی موت واقع ہوئی ہے۔یکم اپریل 2021سے شروع ہونے والی کورونا وائرس کی دوسری لہر کے 69دنوں کے دوران کشمیر میں فوت ہونے والے 757افراد میں 270 خواتین بھی شامل ہیں اور اسطرح وادی میں دوسری لہر میں فوت ہونے والی خواتین کی شرح 35فیصد رہی جو پہلی لہر سے 7فیصد زیادہ ہے۔اس سے قبل 9مارچ 2020سے 31مارچ 2021تک جاری رہنے والی کورونا وائرس کی پہلی لہرمیں فوت ہونے والے 1261اموات میں صرف 363خواتین شامل تھیں اور مرنے والی خواتین کی شرح صرف 28فیصد رہی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق یکم اپریل سے لیکر 8جون2021 تک وادی میں کورونا وائرس کی دوسری لہر میں 757شہری فوت ہوئے جن میں270خواتین شامل ہیں۔ کشمیر میں فوت ہونے والی270خواتین میں 17دنوں کی بچی سے لیکر 100سالہ معمر خاتون بھی شامل ہیں۔ فوت ہونے والی خواتین میں سرینگر میں 80، بارہمولہ میں 37، بڈگام میں 27، پلوامہ میں 25، کپوارہ میں 17، اننت ناگ میں 39، بانڈی پورہ میں 10 ،گاندربل میں 9، کولگام میں 20 اور شوپیان میں 6خواتین شامل ہیں۔وادی میں کورونا وائرس کی پہلی لہر میں فوت ہونے والے 1261شہریوں میں 363خواتین شامل تھیں اور اسطرح پہلی لہر میں فوت ہونے والی خواتین کی شرح صرف 28فیصد تھی۔پہلی لہر کے دوان سرینگر میں142، بارہمولہ میں 39، بڈگام میں 44، پلوامہ میں 26، کپوارہ میں 23، اننت ناگ میں 27، بانڈی پورہ میں 18، گاندربل میں 13، کولگام میں 19 اور شوپیان میں 12خواتین فوت ہوئی تھیں۔