کورونا کا قہر تھم گیا|28اسپتال خالی، 8میں معمول کا کام کاج بحال

 سرینگر //جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کا علاج کرنے کیلئے خصوصی طور پر تیار کئے گئے44اسپتالوں میں سے 28اسپتال خالی پڑے ہیں جبکہ 15سرکاری اسپتالوں میں 159مریض زیر علاج ہیں۔ کشمیر صوبے کے 25سرکاری اسپتالوں میں 14اسپتال خالی پڑے ہیں جبکہ 11اسپتال میں صرف 112متاثرین زیر علاج ہیں۔ جموں صوبے میں  19اسپتالوں کو خصوصی طور پر تیار کیا گیا تھالیکن وہاں بھی 14اسپتال خالی ہیں اور  5اسپتالوں میں 47مریض زیر علاج ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ کورونا وائرس متاثرین کے علاج میں مرکزی کردار نبھانے والے صدر اسپتال سرینگر میں 29مریض زیر علاج ہیں جن میں25کو سانس لینے کیلئے آکسیجن کی ضرورت ہے جبکہ  4مریضوں کی حالت مستحکم ہے۔شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ میں 24کورونا متاثرین زیر علاج ہیں جن میں 19کو آکسیجن کی ضرورت ہے جبکہ دیگر 5کی حالت مسحکم بنی ہوئی ہے۔ جواہر لال نہرو میموریل اسپتال رعناواری میں صرف 2کورونا وائرس مریض زیر علاج ہے اور انکی حالت مستحکم بنی ہوئی ہے۔ کشمیر ویلی نرسنگ ہوم سونہ وار میں کورونا وائرس کے 9مریض زیر علاج ہیں جن میں 5 آکسیجن پر جبکہ 4کی حالت مستحکم بنی ہوئی ہے۔ میڈیکل کالج اسپتال بارہمولہ میں7زیر علاج ہیں۔۔سب ضلع اسپتال سوپور میں  3کورونا وائرس مریض زیر علاج ہیں جن میں سے 2کی حالت مستحکم ہے جبکہ اک کو سانس لینے کیلئے آکسیجن کی ضرورت پڑتی ہے۔جی ایم سی اننت ناگ میں 13مریض زیر علاج ہیں جن میں 7کو آکسیجن کی ضرورت پڑتی ہے جبکہ 6 کی حالت مستحکم ہے۔ ٹروما اسپتال بجبہاڑہ میں صرف 2مریض زیر علاج ہیں اور ان دونوں مریضوں کی حالت مستحکم بنی ہوئی ہے۔ پرائمری ہیلتھ سینٹر چھانہ پورہ میں ایک حاملہ خاتون زیر علاج ہیں اور اسکی حالت مستحکم بنی ہوئی ہے۔ ضلع اسپتال گاندربل میں دو کورونا مریض زیر علاج ہیں ۔ کشمیر کے جن سرکاری اسپتالوں میں کوئی بھی متاثرہ شخص زیر علاج نہیں ہے ، ان میں سکمز میڈیکل کالج بمنہ، ایس ایس ایچ شرین باغ، جی ایم سی اننت ناگ، پرائمری ہیلتھ سینٹر آکورہ مٹن،سی ایچ سی کپوارہ،ضلع اسپتال پلوامہ، ضلع اسپتال کولگام، ضلع اسپتال شوپیان، سی ایچ سی حاجن،طبیہ کالج فاریونانی میڈیسن ؎ شیوتھ، سی ایچ سی بانڈی پورہ،سی ایچ سی دیور،ضلع اسپتال بڈگام، پرائمری ہیلتھ سینٹر پھٹکوٹ بڈگام، نیو بلڈنگ پریشد بڈگام شامل ہیں۔سرکار نے خالی پڑے8اسپتالوں میں روز مرہ کا کام بحال کرنے کی ہدایت جاری کی ہے جن میں 4جموں اور 4کشمیر میں ہیں۔ کشمیر کے جن سرکاری اسپتالوں میں معمول کا کام کاج بحال ہوا ہے، ان میں سکمزمیڈیکل کالج بمنہ، ضلع اسپتال گاندربل اور ضلع اسپتال پلوامہ شامل ہیں۔جموں صوبے کے 5سرکاری اسپتالوں میں47کورونا وائرس متاثرین زیر علاج ہے جن میں 11مریضوں کو سانس لینے کیلئے آکسیجن کی ضرورت پڑتی ہے جبکہ36کورونا وائرس مریضوں کی حالت مستحکم بنی ہوئی ہے۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں 26مریض زیر علاج ہیں جن میں 5کو آکسیجن کی ضرورت ہے جبکہ باقی کی حالت مستحکم بنی ہوئی ہے۔ گورنمنٹ اسپتال گاندھی نگر جموں میں ایک مریض زیر علاج ہے۔ گاندھی نگر اسپتال کے نئے بلاک میں 4مریض زیر علاج ہیں۔ نارائن اسپتال کٹرہ میں 15مریض زیر علاج ہیں۔ جموں صوبے کے  جن 14اسپتالوں میں کوئی بھی مریض موجود نہیں ہے ، ان میں سی ڈی اسپتال جموں، جی ایم سی ڈوڈہ، جی ایم سی راجوری،  جی ایم سی کٹھوعہ، ایس ڈی ایچ کٹرہ، ضلع اسپتال کشتواڑ،ضلع اسپتال پونچھ، کیمونٹی ہیلتھ سینٹر پونچھ، سی ایچ سی سرنکوٹ، ضلع اسپتال رام بن، ائے ایچ گھروال سانبہ، ضلع اسپتال ادھمپور ، سی ایچ سی رام نگر اور کیمونٹی ہیلتھ سینٹر چنائی کے نام شامل ہیں۔