کورونا ویکسین 36000ہیلتھ ورکروں کو دی گئی

 سرینگر //جموں و کشمیر میں فرنٹ لائن ورکروں کو کورونا مخالف ویکسین دینے کا عمل 4فروری سے شروع ہوگا جبکہ پہلے مرحلے میں ابتک 36000 ہیلتھ ورکروں کو ویکسین دئے گئے ہیں۔ فائنانشل کمشنر ہیلتھ اتل ڈلو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ محکمہ مال، پولیس، میونسپلٹی ملازمین اور دیگر فرنٹ لائن ورکروں کو ویکسین دینے کا عمل 4فروری سے شروع ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پلس پولیو مہم کی وجہ سے 3دنوں تک کورونا مخالف ویکسین دینے کا عمل بند رہے گا لیکن 4فروری سے ہیلتھ وکروں کے علاوہ فرنٹ لائن ورکروں کو بھی ویکسین دینے کا عمل شروع کیا جائے گا‘‘۔ ادھر جی ایم سی سرینگر میں کورونا وائرس پر نظر رکھنے کیلئے تعینات نوڈل آفیسر ڈاکٹر رقعیہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ ابھی ایک ہفتے قبل ہی ٹیکہ کا ری شروع کی تھی لیکن پلس پولیو کی وجہ سے پھر بند کرنا پڑی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ جی ایم سی سے منسلک اسپتالوں میں ابتک 600ہیلتھ ورکروں کو ویکسین لگائے گئے ہیں جبکہ دیگر ہیلتھ ورکروں کی ٹیکہ کاری کی مہم جمعرات سے پھر شروع ہوگی‘‘۔سکمز صورہ میں ابتک صرف 125ہیلتھ ورکروں کو ویکسین دیا گیا ہے۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’ ابتک صرف 125ہیلتھ ورکروں نے ہی ٹیکہ لگائے ہیں لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ مزید ملازمین آگے آرہے ہیں‘‘۔ادھر پلوامہ میں 1012، گاندربل میں 600 ورکروں کو ویکسین دئے گئے ہیں جبکہ ان اضلاع میں بھی جمعرات سے کورنا مخالف ٹیکہ کاری کا عمل دوبارہ شروع ہوگا۔