کورونا ویکسین دینے کی شروعات کل سے ہوگی

 سرینگر //16جنوری کو شروع ہونے والی کورونا مخالف ٹیکہ کاری مہم کیلئے سرینگر سمیت وادی بھر میں 36طبی مراکز کی نشاندہی کی گئی ہے۔محکمہ ہیلتھ کے زیر انتظام آنے والے وادی بھر کے اسپتالوں میں14مراکز قائم کئے گئے ہیں جبکہ سرینگر میڈیکل کالج کے تحت آنے والے 8بڑے اسپتالوں اور میڈیکل انسٹی چیوٹ صورہ کے دو اسپتالوں میں بھی کثیر تعداد میں ویکسین مراکز قائم کرلئے گئے ہیں۔وادی بھر میں کورونا ٹیکہ کاری کیلئے سرکاری اسپتالوں میں انتظامات کو حتمی شکل دی گئی ہے۔حکومت کی جانب سے محکمہ ہیلتھ کے تحت کام کرنے اسپتالوں میں کورونا ویکسین کے لئے جو مراکز قائم کئے گئے ہیں ان میں سرینگر کے رعناواری اور غوثیہ اسپتال میں دو،اننت ناگ میں دو،بارہمولہ میں ایک،گاندر بل میں دو، پلوامہ میں ایک،شوپیان میں ایک،کولگام میں ایک ،کپوارہ میں ایک،بانڈی پورہ میں ایک اوربڈگام میں دو مراکز قائم کرنے کو منظوری دی گئی ہے۔جی ایم سی سرینگر کے تحت کام کرنے والے 8 سرکاری اسپتالوں کے علاوہ جے وی سی بمنہ اور سکمز صورہ میں بھی مہم کیلئے انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ جی ایم سی سرینگر میں کورونا مخالف ٹیکہ کاری کیلئے تعینات نوڈل آفیسر ڈاکٹراقبال پنڈت نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ کورونا ٹیکہ کاری کیلئے جی ایم سی میں فیکلٹی ممبران سینئر ریذیڈنٹ، جونیئر رزیڈنٹ، نیم طبی عملہ پوسٹ گریجویٹ اور ایم بی بی ایس طلبہ کے علاوہ صفائی کرمچاری اور سیکورٹی اہلکاروں کو شامل کیا گیا ہے‘‘۔انہوں نے کہا ’’ جی ایم سی میڈیکل کالج کے علاوہ صدر اسپتال سرینگر میں 3ویکسینیشن پوائنٹ قائم کئے گئے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر سے منسلک بون اینڈ جوائنٹ اسپتال برزلہ، سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ، کشمیر ویلی نرسنگ ہوم،سپر سپیشلٹی اسپتال شرین باغ اور دیگر اسپتالوں میں انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ سکمز میڈیکل کالج بمنہ میں 1800ہیلتھ ورکروں کیلئے 3ویکسینیش پوائنٹ قائم کئے گئے ہیں۔ سکمز بمنہ کے پرنسپل ڈاکٹر ریاض احمد ایتو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ 1800ہیلتھ ورکروں ،جن میں فیکلٹی ممبران،سینئر ریزیڈنٹ ، جونیئر ریزیڈنٹ، پوسٹ گریجویٹ اور ایم بی بی ایس طلبہ کے علاوہ نیم طبی عملہ، صفائی کرمچاریوں اور سکیورٹی اہلکار شامل ہیں، کو ویکسین دئے جائیں گے‘‘۔ڈاکٹر ریاض ایتو نے کہا کہ ٹیکہ کاری کیلئے 3پوائنٹس کے علاوہ ویٹنگ روم اور دیگر سہولیات کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ میں فیکلٹی ممبران،سینئر ریذیڈنٹ، جونیئر ریذیڈنٹ ، پوسٹ گریجویٹ اور ایم بی بی ایس طلبہ سمیت 4ہزار طبی عملے کیلئے 8ویکسینشن پوائنٹ قائم کئے گئے ہیں جبکہ اس کے علاوہ  ویٹنگ روم اور دیگر سہولیات کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا ’’سکمز صورہ میں وڈیوکانفرنسگ کے ذریعے وزیر اعظم نریندر مودی ویکسین لینے والے افراد کے ساتھ تبادلہ خیال کریں گے‘‘۔ مرکزی سرکار نے  پورے بھارت میں  Co-win aapکے ذریعے ہیلتھ ورکروں کو ٹیکہ کاری کی تاریخ کا پیغام بھیجا جائے گا اور طے شدہ تاریخ پر ہیلتھ وکروں کو ویڈ مخالف ویکسین دیا جائے گا۔