کورونا معاملات میں پھر اُچھال

 سرینگر //جموں و کشمیر میںکورونا وائرس کے معاملات میں بالکل اسی طرح سے اضافہ ہورہا ہے جیسا کہ پچھلے سال جون کے مہینے میں ہورہا تھا۔جون 2020کے دوسرے ہفتے سے کورونا کے معاملات 79سے بڑھ کر 100سے زائد درج ہوتے گئے اسی طرح اب بھی وائرس متاثرین کی تعداد بڑھ رہی ہے۔ بدھ کو پچھلے 24گھنٹوں کے اعدادوشمار کے مطابق 68دنوں کے بعد  126 افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں۔بالکل اسی طرح جون کے وسط میں بھی متاثرین کی تعداد 125سے تجاوز کر گئی تھی اور اموات بھی  زیادہ ہونے لگی تھیں۔بدھ کو ایک 65سالہ شخص فوت ہوگیا ۔ بدھ کو مثبت قرار دئے گئے 126افراد میں 20جموں جبکہ 106کشمیر صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔ کشمیر سے تعلق رکھنے والے 106متاثرین میں سے 77مقامی سطح پرجبکہ 29بیرون ریاستوں اور ممالک سے سفر کے بعد واپس لوٹے ہیں۔جموں صوبے میں 20مثبت قرار دیئے گئے جن میں 2بیرون ریاست یا ممالک سے سفر کر کے لوٹے تھے۔کشمیر سے تعلق رکھنے والے 106افراد میں سب سے زیادہ 62افراد سرینگر سے تعلق رکھتے ہیں ۔سرینگر میں13جنوری کے بعد پہلی مرتبہ متاثرین کی تعداد 60سے زیادہ ہے۔ جی ایم سی اننت ناگ میں تعینات ایک سینئر ڈاکٹر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ اوترسو ناگہ گنڈ اننت ناگ سے تعلق رکھنے والا ایک 65سالہ شخص کورونا وائرس سے فوت ہوگیا ہے۔ 15فروری سے17 مارچ تک2436فراد کی رپورٹیں مثبت آئیں جن میں سے2037کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں ۔ کشمیر سے تعلق رکھنے والے2037افراد میں سے1415مقامی سطح پر جبکہ 681بیرون ریاستوں اور ممالک سے لوٹے ہیں۔کشمیر میں متاثرین کی مجموعی تعداد75690ہوگئی ہے جبکہ صوبے میں وائرس سے ابتک 1246  فوت ہوگئے ہیں۔