کوروناوائرس کی پھر دستک | گزشتہ ماہ کے دوران نئے کیسز میں 80فیصد اضافہ : ڈبلیو ایچ او

یو این آئی

پیرس//دنیا بھر میں گزشتہ ماہ کے دوران کووڈ- 19 کے نئے کیسز میں 80 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) نے ہفتہ کو یہ اطلاع دی۔ڈبلیو ایچ او نے مئی میں کہا تھا کہ کووڈ اب عالمی صحت کی ہنگامی صورتحال نہیں ہے لیکن اس نے کوروناوائرس کے معاملات میں اضافے سے خبردار کیا اور کہا کہ انفیکشن سے لوگوں کی موت کا بھی خطرہ ہے ۔ اس ہفتہ وار اعداد و شمار میں اقوام متحدہ کے ادارے نے کہا کہ ممالک میں 10 جولائی سے 6 اگست تک تقریباً 15 لاکھ ممالک میں کورونا کے نئے کیسز کی تصدیق ہوئی ہے جو کہ گزشتہ 28 دنوں کے مقابلے میں 80 فیصد زیادہ ہے ۔ اموات کی تعداد 57 فیصد گر کر 2500 ہوگئی۔ ڈبلیو ایچ او نے کہا کہ کئی نئے معاملے مغربی بحرالکاہل کے علاقے میں آئے ، جس میں انفیکشن میں 137 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔ امریکہ، برطانیہ، فرانس اور جاپان سمیت شمالی نصف کرہ کے کئی ممالک میں حالیہ ہفتوں میں گرمیوں میں کووِڈ کے کیسز میں اضافہ دیکھا ہے ۔

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس ایڈنوم گیبریئس نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ ‘‘کووڈ کیسز اور اموات کی ایک بڑی تعداد میں اچانک اضافہ ہو سکتا ہے ۔’’فرانسیسی وزیر صحت اوریلین روسو نے بیداری کی اپیل کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ کووڈ کی تعداد نچلی سطح پر برقرار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں آنے والے وقت میں اس وائرس کے دوبارہ سر اٹھانے کے ساتھ رہنا پڑے گا۔یونیورسٹی آف جنیوا میں انسٹی ٹیوٹ آف گلوبل ہیلتھ کے ڈائریکٹر اینٹون فلاہالٹ نے کہا کہ کووِڈ کی اصل صورتِ حال ‘‘کووڈ کیسز کے حوالے سے ، صحت کے حکام کو فوری طور پر ایک قابل اعتماد کوڈ ہیلتھ سرویلنس سسٹم کو بحال کرنے کی ضرورت ہے ۔’’انہوں نے کہا کہ کووڈ ویکسینیشن کی وجہ سے اب انفیکشن کا اثر کم ہوا ہے ۔ لیکن لوگوں کے اس کا شکار ہونے کا خطرہ اب بھی برقرار ہے ۔ ڈبلیو ایچ او نے ممالک پر زور دیا ہے کہ وہ ویکسینیشن کی کوششیں تیز کریں۔