کمشنر سیکریٹری زراعت کی صدارت میں جائزہ میٹنگ منعقد

سرینگر//کمشنر سیکریٹری محکمہ زراعت پیداوار ایم ڈی خان نے کہا ہے کہ محکمہ کی طرف سے جو اقدامات کئے گئے ہیں انہیں نتائج خیز بنانے کے لئے ٹھوس پہل کی ضرورت ہے تاکہ زمینی سطح پر واضح بدلائو ظاہر ہوسکے ۔ سیکریٹری نے ان باتوں کا اظہار لال منڈی میںپہلی جائزہ میٹنگ کے دوران کیا۔میٹنگ میںناظم زراعت کشمیر ،جوائنٹ ڈائریکٹر ایگریکلچر ایکسٹنشن، جوائنٹ ڈائریکٹر ایگریکلچر انپٹس،جوائنٹ ایگریکلچر انجینئرینگ اور سبجیکٹ میٹر سپیشلسٹس کے علاوہ دیگر متعلقہ آفیسران بھی موجود تھے۔اس موقعہ پر خطاب کے دوران کمشنر سیکریٹری نے کہا کہ ریاست کی آبادی کا 75 سے 80فیصد بلواسطہ یا بلاواسطہ طور زرعی شعبے سے وابستہ ہے ۔اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ محکمہ زراعت تمام وسائل کو منصفانہ طور پر بروئے کار لائیں۔ انہوںنے کہا کہ محکمہ زراعت کسانوں کی فلاح وبہبود ی کا وعدہ بند ہے تاکہ دیہی معیشت کو فروغ حاصل ہوسکے اور مسائل کا واحد حل یہ ہے کہ کسان برادری کی سماجی اوراقتصادی بنیاد کو مزید مستحکم کیا جائے ۔میٹنگ کے دوران کمشنر سیکریٹری نے زرعی شعبے کے فروغ کے لئے ایک ٹھوس پالیسی اورٹیکنالوجی کو بروئے کار لانے پر زوردیا۔انہوںنے محکمہ کے بہتر کام کاج کے لئے باہمی تال میل پر زوردیا تاکہ فارم سیکٹر کو درپیش چیلنجوں سے نمٹاجاسکے۔