کمشنر سیکریٹری دیہی ترقی کاکپوارہ دورہ

کپوارہ//کمشنر سیکریٹری محکمہ دیہی ترقی اور پنچائتی راج مندیپ کور نے منگل کو ضلع کپوارہ کا دورہ کیا اور ضلع کیپکیس بجٹ 2021-22 کے تحت جاری ترقیاتی کاموں کی پیش رفت کا جائزہ لینے کیلئے افسران اور پی آر آئیز کی ایک مشترکہ میٹنگ طلب کی ۔ چیئر مین ڈی ڈی سی کپوارہ عرفان سلطان پنڈت پوری ، وائس چیئر مین ڈی ڈی سی حاجی فاروق احمد میر ، ڈپٹی کمشنر کپوارہ امام دین ، مشن ڈائریکٹر جے کے آر ایل ایم ، ڈائریکٹر آر ڈی ڈی کشمیر ، ڈائریکٹر رورل سینی ٹیشن ، ڈائریکٹر پنچائت ، ایڈیشنل سیکریٹری آر ڈی ڈی اینڈ پی آر ، اے ڈی ڈی سی کپوارہ ، جے ڈی پلاننگ کے علاوہ ڈی ڈی سی ممبران ، بی ڈی سی چیئر پرسن ، ضلع اور سیکٹورل افسران نے میٹنگ میں شرکت کی ۔ منتخب نمائندوں کو فعال طور پر کام کرنے کی تاکید کرتے ہوئے کمشنر سیکریٹری نے نچلی سطح کے لیڈروں سے کہا کہ وہ ہر سطح پر منصوبہ بندی کی تشکیل میں خود کو شامل کریں تا کہ اپنی ذمہ داریوں کو نبھا سکیں ۔ ضلع میں عہدیداروں کی کمی کو پورا کرنے کیلئے کمشنر سیکریٹری نے انہیں یقین دلایا کہ نئے بی ڈی او اور جے ای فوری طور پر تعینات کئے جائیں گے ۔ انہوں نے منتخب نمائندوں سے یہ بھی کہا کہ وہ پنچائت سطح پر تمام تنازعات کو حل کریں تا کہ تمام رکاوٹوں کو موثر طریقے سے دور کیا جا سکے ۔ انہوں نے محکمہ کی مختلف اسکیموں کے تحت منظور شدہ تمام کاموں کی فہرسٹ پنچائت گھر میں پنچائت انفارمیشن بورڈ ( پی آئی بی ) پر آویزاں کرنے پر خصوصی زور دیا ۔ پنچائتوں میں کام کی رفتار کو تیز کرنے پر زور دیتے ہوئے انہوں نے متعلقہ لوگوں سے کہا کہ وہ تمام ٹھیکیداروں کو بلیک لسٹ کریں جو مقررہ مدت میں کام مکمل نہیں کرتے ہیں تا کہ ہمارا کام متاثر نہ ہو ۔امندیپ کور نے مزید کہا کہ پی آر آئی کے اراکین کی صلاحیت سازی کے پروگرام منعقد کئے جائیں گے تا کہ نمائندوں کو نچلی سطح پر اسکیموں کے کام سے آگاہ کیا جا سکے ۔ پنچائتوں کے انٹر نیٹ کنیکٹیویٹی کے بارے میں کمشنر سیکرٹری نے تمام پنچائتوں کو انٹر نیٹ کے ذریعے منسلک کرنے پر زور دیا ۔  قبل ازیں چیئر مین ڈی ڈی سی نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا اور محکمہ دیہی ترقی اور ضلعی ترقیاتی کونسل کو درپیش مختلف مسائل کو پیش کیا ۔ ڈپٹی کمشنر کپوارہ نے اپنے خطاب میں معززین کو ضلع کے ترقیاتی پروفائل کے بارے میں آگاہ کیا ۔ منتخب نمائندوں کی طرف سے مختلف مسائل اور مطالبات اٹھائے گئے جن میں نئے ماڈل گاؤں کا قیام ، ڈی ڈی سی اور بی ڈی سی کے کردار اور ذمہ داریوں کی حد بندی ، منریگا کے معاون عملے میں اضافہ شامل تھا ۔ کمشنر سیکریٹری نے تمام مطالبات کو غور سے سُنا اور انہیں یقین دلایا کہ اسکیم کے دفعات کے مطابق ان کے تمام حقیقی مطالبات کو پورا کیا جائے گا ۔