کمزور کنبوں کو رہائش کی فراہمی دیہی ترقی محکمہ کی جانب سے 272کروڑ روپئے فراہم

عظمیٰ نیوز سروس

جموں//دیہی ترقی اور پنچایتی راج محکمہ نے دیہی غرباء کو مکانات کی فراہمی کو یقینی بنانے کے ایل جی منوج سنہا کے اعلان کے مطابق مستحقین میں 272.55 کروڑ روپئے پردھان منتری آواس یوجنا گرامین (PMAY-G)کے تحت جاری کئے ہیں۔ اس رقم میں دیہی ترقی کی وزارت کی طرف سے حال ہی میں جاری کردہ 245.30 کروڑ روپے کا مرکزی حصہ شامل ہے۔چیف سکریٹری اتل دلو نے مسلسل کوششوں اور کامیابیوں کو یقینی بنانے کیلئے اسکیم کے نفاذ کا مسلسل جائزہ لیا۔ دیہی ترقی اور پنچایتی راج محکمہ نے دیہی علاقوں میں کمزور خاندانوں کو رہائش فراہم کرنے کے مقصد سے اسکیم کے مؤثر نفاذ کیلئے زمینی سطح پر ایک سلسلہ شروع کیا ہے۔اس سلسلے میں موصول ہونے والی ایک سرکاری اطلاع کے مطابق دیہی ترقی کے محکمہ اور پنچایتی راج نے گزشتہ 10 دنوں میں PMAY-G کے تحت 200کروڑ روپے فراہم کئے گئے جس میں 3450 مستفیدین میںکو پہلی قسط، 24388 مستفیدین کو دوسری قسط اور 9860 مستفیدین کو تیسری قسط فراہم کی گئی۔

 

ایل جی انتظامیہ کا یہ اقدام وزیراعظم کے سب کیلئے چھت کے عزم کو پورا کرنے کی عکاسی کرتا ہے۔یہاں یہ بتانا ضروری ہے کہ دیہی ترقی اور پنچایتی راج محکمہ 1 اپریل 2016 سے CSS PMAY-G کو لاگو کر رہا ہے تاکہ بنیادی سہولیات کے ساتھ 3۔37 لاکھ پکے مکانات کی تعمیر کیلئے مالی امداد فراہم کی جا سکے۔ اب تک تقریباً 187694مکانات مکمل ہوچکے ہیں جن میں سے ریکارڈ تعداد میں 59982 مکانات صرف 2023-24 میں مکمل ہوئے ہیں۔مزید یہ کہ 149282 مکانات تعمیر کے مختلف مراحل میں ہیں اور محکمہ کی جانب سے جاری مکانات کو آئندہ 6 ماہ میں مکمل کرنے کیلئے سخت کوششیں کی جا رہی ہیں۔ PMAY-G استفادہ کنندگان کے بنیادی سہولیات کے ساتھ ’پکے گھر‘ کا خواب پورا کرے گا، ان کی عزت نفس، سماجی حیثیت اور معیار زندگی میں اضافہ کرے گا۔اس مالی سال کے آخر تک PMAY-G کے مستفیدین کو 400 کروڑ روپئے فراہم کئے جارہے ہیں۔ سکریٹری دیہی ترقی محکمہ اور پنچایتی راج ڈاکٹر شاہد اقبال چوہدری نے سکیم کے مقاصد کو فوری طور پر پورا کرنے کیلئے فیلڈ اسٹاف کو مؤثر طریقے سے متحرک کیا ہے۔ اس نے موثر عمل درآمد کو آسان بنانے اور تعمیراتی کاموں کے معیار کے ساتھ ساتھ بروقت تکمیل کو یقینی بنانے کے لیے کئی اختراعی اقدامات شروع کیے ہیں۔