کل بھوشن جادھو معاملہ

ہیگ // بین الاقوامی عدالت(آئی سی جے ) نے کل بھوشن جادھو معاملے کی آج پیر سے سماعت شروع کی۔سماعت کے دوران ہندوستان کی طرف سے دیپک متل نے عدالت کو بتایا کہ پاکستان نے جادھو کے خلاف مضحکہ خیز کارروائی کی ہے ۔سینئر وکیل ہریش سالوے نے عدالت سے کہا کہ ایک ہندوستانی شہری کی زندگی خطر ے میں ہے اور یہ بڑا افسوس ناک معاملہ ہے ۔ انہوں نے الزام لگایا کہ پاکستان اس معاملے کو اپنے جھوٹے پروپیگنڈہ مہم کے لئے استعمال کررہا ہے اور یہ ویانا کنونشن کی صریح خلاف ورزی ہے ۔آئی سی جے مقررہ پروگرام کے مطابق جادھو معاملے کی سماعت 21فروری تک کرے گا۔ دسمبر 2017میں جادھو کو والدہ اور بیوی سے ملنے کی اجازت دی گئی تھی لیکن بعد میں ہندوستان وزارت خارجہ نے الزام لگایا تھا کہ جادھو اس دوران کافی تناو میں تھے اور دباو کے ماحول میں بات کررہے تھے ۔اڑتالیس سالہ جادھو کو پاکستان کی فوجی عدالت نے جاسوسی کے الزام میں اپریل 2017میں موت کی سزا سنائی تھی لیکن بعد میں حکومت ہند نے اس معاملے میں بین الاقوامی عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا ۔ آئی سی جے کی دس رکنی بنچ نے 18مئی 2017کو پاکستانی فوج کی عدالت کے فیصلے پر اسٹے دے دیا تھا۔یو این آئی