کشمیر یونیورسٹی کی وضاحت

سرینگر//کالج سال اول کے پہلے سمسٹر کے نتائج میں متعدد امیدواروں کو ،ایل او/این اے حتی کہ ری ایپئر ظاہر کرنے پر پیدا شدہ قضیے پر اپنا موقف ظاہر کرتے ہوئے کشمیر یونیورسٹی حکام نے اس کیلئے کئی وجوہات کو بنیاد بتایا ہے ۔یونیورسٹی حکام نے کہاکہ سی بی ایس سی کے پہلے سمسٹر طلباء نے اپنے جواب ناموں میں لازمی خانوں کو پُر نہیں کیا ہے اور انہوں نے اپنے او ایم آر شیٹ پر متعلقہ دائروں کو نہیں بھرا ہے یا اس طرح سے یہ دائرے بھرے ہیں جو کہ او ایم آر مشین سے پڑھے نہیں گئے اور اسی وجہ سے ان کے نمبرات نتائج میں شمار نہیں کئے جاسکے ۔یونیورسٹی حکام کے مطابق جن طلباء کے نتائج میں ایل او یا ری ایپئر دکھایا گیا ہے ان میں سے بیشتر نے او ایم آر شیٹ میں اس جگہ دائرے کو نہیں بھرا ہے جہاں پر رول نمبر لکھاجانا تھا ۔انہوں نے اسکے بجائے اپنے رول نمبرات دائروں کو بھرنے کے بجائے ہندسوں میں لکھے ہیں جسے او ایم آر مشین پڑھ نہیں سکی۔تیسری وجہ کے بارے میں حکام کا کہنا تھا کہ بعض طلباء نے او ایم آر شیٹ پر سوالنامے کی سیریز کا ذکر نہیں کیا ہے اس وجہ سے متعلقہ جوابی کنجی ان طلباء کے حاصل کردہ نمبرات کو ظاہر نہیں کرسکے ۔مزید برآں بعض طلباے کے پریکٹکل نمبرات وقت پر جمع نہیں کئے گئے جس کی وجہ سے انکے نتائج میں ایل اویا ری ایپئر دکھایا گیا ہے