کشمیر میں درجہ حرارت معمول سے زیادہ درج| تبدیلی کا تاحال امکان نہیں

سری نگر// وادی کشمیر میں درجہ حرارت مسلسل معمول سے زیادہ درج ہونے سے موسم بہار میں ہی موسم گرما جیسی گرمی محسوس کی جار ہی ہے۔
محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے مطابق وادی میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران موسم خشک رہنے کا امکان ہے۔
متعلقہ محکمے کے ایک ترجمان نے بتایا کہ وادی میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران موسم مجموعی طور پر خشک رہنے کا امکان ہے تاہم شمالی کشمیر میں ایک دو مقامات پر ہلکی بارشیں متوقع ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بعد ازاں وادی میں 8 اپریل تک موسم خشک رہنے کا امکان ہے۔ ادھر وادی میں شبانہ درجہ حرارت مسلسل معمول سے زیادہ درج ہو رہا ہے۔ گرمائی دارلحکومت سری نگر میں کم سے کم درجہ حرارت 8.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو معمول سے 2.0 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ تھا۔ وادی کے شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ میں کم سے کم درجہ حرارت4.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو معمول سے 5.7 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ تھا۔
ماہرین موسمیات کے مطابق گلمرگ کا شبانہ درجہ اس وقت منفی0.8 ڈگری سینٹی گریڈ ہونا چاہئے تھا۔ وادی کے دوسرے مشہور سیاحتی مقام پہلگام میں کم سے کم سے درجہ حرارت3.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو معمول سے 1.5 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ تھا۔ سرحدی ضلع کپوارہ میں کم سے کم درجہ حرارت 5.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو معمول سے 0.7 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ ریکارڈ ہوا تھا۔ گیٹ وے آف کشمیر کے نام سے مشہور قصبہ قاضی گنڈ میں کم سے کم درجہ حرارت 6.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔
دریں اثنا وادی میں ہفتے کو بھی دن بھر دھوپ چھائی رہی اور وادی کے سیاحتی مقامات بالخصوص جھیل ڈل کے کنارے پر واقع باغ گل لالہ اور دیگر مغل باغات میں سیاحوں کا غیر معمولی رش دیکھا گیا۔
وادی کے دیہی علاقوں میں بھی کسانوں کو اپنے کھیت کھلیانوں اور میوہ باغوں میں مختلف کاموں کے ساتھ مصروف عمل دیکھا جا رہا ہے۔