کشمیر میں اپنی نوعیت کی پہلی سائنس سٹی کا مجوزہ قیام

سرینگر//سائینس اینڈ ٹیکنالوجی کو فروغ دینے اورکشمیر میں سیاحت کو بڑھاوا دینے کے لئے صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمد خان نے ضلع ترقیاتی کمشنروں کو اپنے متعلقہ اضلاع میں 100کنال سرکاری اراضی کی نشاندہی کرنے کی ہدایت دی تاکہ کشمیر میں اپنی نوعیت کی پہلی سائنس سٹی کا قیام عمل میں لایا جاسکے۔تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں کو سرکاری اراضی کے نزدیک سڑک اور ریل رابطوں،پینے کے پانی،بجلی،صحت سہولیات اور دیگر انتظامات کے بارے میں تفاصیل پیش کرنے کی ہدایت دی تاکہ لوازمات کوحتمی شکل دی جاسکے۔ڈائریکٹوریٹ آف سکول ایجوکیشن نے وادی میں پہلی سائنس سٹی کے قیام کے لئے 230کروڑ روپے کا ڈی پی آر تیار کیا ہے۔سائنس سٹی کے قیام کا مقصد عام لوگوںمیں سائنس رحجان پیدا کرنا اوسائنس وٹیکنالوجی کو فروغ دینا ہے تاکہ عام لوگوں کے ساتھ ساتھ طلبأ کو بھی فائدہ ہو، اورنمائشوں ،سیمناروں اور دیگر تعلیمی سرگرمیوں کو بڑھاوا دینے کے علاوہ کشمیر میں سیاحتی سرگرمیوں کو دوام بخشا جاسکے۔سائنس ٹی میںعوام کے لئے مختلف نوعیت کی سہولیات بھی دستیاب ہوں گی جو کہ یقیناً عوامی دلچسپی کا باعث بن سکتی ہیں۔