کرگل میں این سی اور کانگریس کا اتحاد

کرگل //یو این آئی//نیشنل کانفرنس نے کرگل میں کانگریس سے اتحاد کرکے چوتھی لداخ خود مختار پہاڑی ترقیاتی کونسل تشکیل دے دی ۔ پیر کے روز یہاں بارو ہال کرگل میں منعقد ہونے والی تقریب میں نیشنل کانفرنس لیڈر فیروز احمد خان کو بلامقابلہ نئی کونسل کا چیئرمین و چیف ایگزیکٹو کونسلر منتخب کرلیا گیا۔ وہ پہاڑی ترقیاتی کونسل (کرگل) کے ساتویں چیئرمین و چیف ایگزیکٹو کونسلر بن گئے ہیں۔ تقریب میں نیشنل کانفرنس اور کانگریس کے کونسلروں نے فیروز خان کا نام تجویز کیا جس کے بعد انہیں بلامقابلہ چیئرمین منتخب کیا گیا۔ این سی اور کانگریس کے درمیان ہوئے معاہدے کے مطابق چیئرمین و چیف ایگزیکٹو کونسل کا عہدہ نیشنل کانفرنس کے پاس رہے گا جبکہ کونسل میں دونوں جماعتوں کے دو ایگزیکٹو کونسلر ہوں گے۔ تاہم دونوں جماعتوں کی طرف سے ایگزیکٹو کونسلروں کا اعلان کیا جانا ابھی باقی ہے۔ لداخ خود مختار پہاڑی ترقیاتی کونسل میں نیشنل کانفرنس اور کانگریس کے کونسلروں کی تعداد بالترتیب 10 اور 8 ہے۔ ذرائع نے بتایا ’این سی اور کانگریس کے سینئر لیڈران بشمول فیروز خان ، ضلع صدر این سی حاجی حنیفہ جان اور ضلع صدر کانگریس ذاکر حسین کے درمیان گذشتہ روز ایک اہم میٹنگ ہوئی جس میں معاہدے کو حتمی شکل دی گئی‘۔ فیروز خان نے لداخ خود مختار پہاڑی ترقیاتی کونسل کے چیئرمین منتخب کئے جانے کے بعد نامہ نگاروں کو بتایا کہ کسی جماعت کو واضح اکثریت نہ ملنے کی وجہ سے نیشنل کانفرنس اور کانگریس کے درمیان اتحاد ناگزیز بن گیا تھا۔ فیروز خان سابق نیشنل کانفرنس۔ کانگریس مخلوط حکومت میں وزیر مملکت بھی رہے ہیں ۔ خیال رہے کہ 27اگست کو کونسل کے انتخابات  میں نیشنل کانفرنس کو10، کانگریس کو8، آزاد امیدوار5، پی ڈی پی کو2اور بھارتیہ جنتا پارٹی کو ایک نشست پر کامیابی ملی تھی ۔ 30رکنی کونسل میں سے 26نشستوں پر انتخابات ہوئے تھے جبکہ چار ممبران حکومت کی طرف سے نامزد کئے جانے ہیں۔