کرگل میںکئی عوامی وفود وزیر اعلیٰ سے ملاقی

کرگل//تین دن کے دورے کے دوران کل یہاں کئی وفود وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی سے ملاقی ہوئے۔ ان وفود نے وزیر اعلیٰ کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے مرکزی حکومت سے ایک عرصے سے التواء میں پڑے زوجیلہ ٹنل کی تعمیر کے پروجیکٹ کو منظورکرایا۔ انہوں نے کرگل ڈگری کالج میں اضافی سہولیات، نئے کورس متعارف کرانے کے اعلانات کے لئے بھی وزیر اعلیٰ کا شکریہ ادا کیا۔ایم ایل اے اصغر کربلائی کی قیادت میں کانگریس پارٹی کے نمائندوں نے کرگل کے لئے ہوائی سروس کو متعارف کرانے، ٹیلیفون نظام میں بہتری لانے، کشمیر یونیورسٹی کے سیٹلائٹ کیمپس میں نئے مضامین کو متعارف کرانے اور ڈاکٹروں و نیم طبی عملے کی خالی پڑی اسامیوں کو پُر کرنے جیسے مطالبات وزیر اعلیٰ کو پیش کئے۔پی ڈی پی اور بی جے پی کے نمائندوں کے وفود نے بھی ایسے ہی مطالبات کی فہرست وزیر اعلیٰ کو پیش کی۔امام خمینی میموریل ٹرسٹ کرگل کے ممبران نے مطالبہ کیا کہ تُر تُک۔ ہانو سڑک کی تعمیر و تجدید عمل میں لائی جائے۔کرگل ٹور اینڈ ٹریول انڈسٹری نے محبوبہ مفتی کے اُس اعلان کو سراہا جس کے تحت کرگل کو الگ سیاحتی پیکج حاصل ہوگا۔مقامی ملازمین نے مرکزی حکومت کے ملازمین کی طرز پر ہارڈ شِپ الاؤنس منظور کرانے کا مطالبہ کیا۔کرگل میں اپنی پیشہ وارانہ صحافتی کام کاج میں بہتری لانے کے لئے وہاں کے میڈیا افراد نے وزیر اعلیٰ سے زیادہ کنکٹویٹی فراہم کرنے کی درخواست کی۔وزیر اعلیٰ نے تمام وفود کو یقین دلایا کہ اُن کے مطالبات کو مرحلہ وار طریقے پر متعلقہ حکام کے ساتھ اُٹھایا جائے گا۔ محبوبہ مفتی نے ضلع کے لوگوں کا تہہ دل سے شکریہ اداکیا کہ انہوں نے زبردست خوش و خروش کے ساتھ ان کا استقبال کیا۔