’کرپشن کو نا، قوم کو ہاں‘ بدعنوانی کے خلاف ورچوئل ٹور ایپلی کیشن کا آغاز

عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر//چیف سکریٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا نے کل جموں و کشمیر ای گورننس ایجنسی کے ذریعہ تیار کردہ ورچوئل ٹور ایپلی کیشن کا آغاز کیا جو افسران کو دور دراز علاقوں کا دورہ کرنے کے قابل بنائے گی تاکہ وہ عوامی شکایات اور ترقیاتی سرگرمیوں کا جائزہ لے سکیں۔ ورچوئل ٹور پروجیکٹ ویڈیو کانفرنسنگ کی خصوصیات کو محل وقوع پر مبنی ورچوئل تعامل کے ساتھ ملا کر ریموٹ سائٹ کے معائنے کے لیے ایک موبائل ایپ متعارف کراتا ہے۔ یہ اس لحاظ سے تبدیلی ہے کہ یہ افسران کو خودکار ریکارڈ کے ساتھ عوام کے ساتھ بات چیت کے علاوہ تمام ترقیاتی سرگرمیوں کا حقیقی جائزہ لینے کے قابل بناتا ہے۔ایپلی کیشن دفتر کے احاطے سے نکلے بغیر دور دراز علاقوں کا دورہ کرنے کا ایک آسان طریقہ پیش کرتی ہے۔

افسران ریئل ٹائم میں دور دراز سے سائٹس کی کھوج اور معائنہ کر سکتے ہیں اور زمین پر پراجیکٹس پر عمل درآمد کرنے والے فیلڈ فنکشنز کو براہ راست ضروری ہدایات دے سکتے ہیں۔مزید یہ کہ ایپلی کیشن AI پر مبنی ہے جو ریکارڈ شدہ مشاہدات کو متن میں تبدیل کرتی ہے اور صارف کی ضروریات کے مطابق اس کا خلاصہ بھی فراہم کرتی ہے۔ ایپلیکیشن کو سائٹ کے موثر معائنے کے لیے بھی تیار کیا گیا ہے، جس سے یہ عام ویڈیو کالنگ ایپس سے الگ ہے جو ایسی ایپلی کیشنز سے مطلوبہ زیادہ تر مطلوبہ خصوصیات کو سپورٹ نہیں کرتی ہیں۔چیف سکریٹری نے UT کے شہریوں کے لیے آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کے کئی مقابلوں کا آغاز کیا جس کا عنوان تھا ’’کرپشن کو نہ کہو، قوم سے عہد کرو‘‘ کے تحت اسی طرح کی خطوط پر ’’ویجیلنس آگاہی ہفتہ‘‘ منایا جائے۔ان مقابلوں کے بارے میں کمشنر سکریٹری، آئی ٹی، پریرنا پوری نے بتایا کہ ان میں مضمون/شاعری، پوسٹر سازی اور نعرہ لکھنے کے مقابلے شامل ہیں۔ یہ تمام مقابلے 5 نومبر تک عوام کے لیے کھلے ہیں اور جیتنے والوں کے لیے دلچسپ انعامات ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ دلچسپی رکھنے والے افراد جموں و کشمیر حکومت کے ویب پورٹل http://jk.mygov.in پر لاگ ان کرکے مقابلوں میں حصہ لے سکتے ہیں۔پہلے فاتح کے لیے 10,000نقد انعام روپے ہے، اسی طرح دوسرا انعام اور تیسرا انعام جیتنے والوں کو تینوں مقابلوں میں بالترتیب 8000 اور 5000 روپے کا نقد انعام دیا جائے گا۔چیف سکریٹری نے قومی اتحاد سے متعلق تقریبات میں جموں و کشمیر کے لوگوں کی پرجوش شرکت کی تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ حال ہی میں ختم ہونے والی UT یوم تاسیس کی تقریبات میں 11 لاکھ سے زیادہ لوگوں کی شرکت جموں و کشمیر کی تاریخ میں اس طرح کی پہلی مثال ہے۔