کرناہ کپوارہ سڑک کی حالت ناگفتہ بہ

کرناہ // کرناہ کپوارہ سڑک کی خستہ حالت کے نتیجے میں کرناہ کی آبادی میں محکمہ بیکن کے تئیں غم و غصہ میں اضافہ ہورہا ہے۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ انہوں نے اس ضمن میں کئی بار احتجاجی مظاہرے کئے اور معاملہ اعلیٰ حکام کی نوٹس میں لایا لیکن سڑک پر میکڈم بچھانے کے حوالے سے کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی ۔نستہ چھن گلی سے لیکر ٹیٹوال تک سڑک پر نہ صرف گہرے کھڈبن چکے ہیں جس کے نتیجے میں ٹرانسپورٹروں کو بھی مشکلات درپیش ہیں۔ٹرانسپورٹ یونین کے صدر عبدالمجید میر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سڑک پر روزانہ100کے قریب  سومو گاڑیوں کے علاوہ مال بردار گاڑیاں سفر کرتی ہیںلیکن حالت ایسی ہے کہ مسافر گاڑیوں کے مالکان کی اتنی کمائی نہیں جتنا انہیں سڑک کی خستہ حالی کے باعث گاڑیوں کی مرمت پر خرچہ ہوتا ہے ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ سڑک اس قدر خستہ ہے کہ مسافر اپنی جانوں کو جوکھم میں ڈال کر اس سڑک پر سفر کرتے ہیں ۔معلوم رہے کہ بیکن محکمہ ہر سال لوگوں سے وعدے کرتی ہے کہ سڑک کی مرمت کی جائے گئی لیکن نہ سڑک پر تارکول بچھایا گیا اور نہ ہی ڈرین تعمیر کی گئی ۔ رواں سال کے مارچ میں بیکن نے اپریل سے سڑک پر تارکول بچھانے کالوگوں سے وعدہ کیاتھا لیکن ستمبر کا ایک ہفتہ بھی بیت چکا لیکن سڑک پر کوئی کام شروع نہیں ہوا ۔لوگوں نے گورنر انتظامیہ سے اپیل کی کہ بیکن کو اس کیلئے جواب دہ بنایا جائے تاکہ انہیں عبورومرور میں دقتوں سے نجات مل جائے۔