کرناہ میں موسلادھار بارشوں سے بیشتر سڑک رابطے منقطع

 کرناہ //پچھلے دو روز سے کرناہ کے میدانی علاقوں میں ہو رہی موسلادار بارشو ں اور بالائی علاقوں میں برف باری کے نتیجے میں معمولات زندگی متاثر ہو کر رہ گئی ہے بالائی علاقوں میں تازہ برف باری کے چلتے انتظامیہ نے جہاں کرناہ کپواڑہ شاہراہ کو احتیاطی طور پر منگل کی شام سے گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند کر دیا ہے وہیں کیرن کپواڑہ سڑک مسلسل دوسرے روز بھی منقطع رہی ۔کرناہ انتظامیہ کے مطابق موسم خوشگوار ہونے کے بعدہی شاہراہ کو گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بحال کیا جائے گا۔ادھر کرناہ کے میدانی علاقے میں موسلادھار بارشوں کا سلسلہ پچھلے 24گھنٹوں سے جاری ہے جس کے نتیجے میں کئی بالائی علاقوں کی رابطہ سڑکوں ہیڈکواٹر سے منقطع ہو کر رہ گئی ہیں ان سڑکوں میں گبرہ چرکونی ،جاڈہ کنڈی ، ٹولی جبڑی ، سکھ بریج بادرکوٹ ہیبکوٹ امروہی سڑکیں شامل ہیںان سڑکوں پر جگہ جگہ پتھر اور پسیاں گر آئی ہیںجبکہ بیکن کے تحت آنے والی ٹیٹوال ٹنگڈار سڑک بھی کل صبح اُس وقت ٹریفک کی نقل حرکت کیلئے مسدود ہو کر رہ گئی جب سڑک پر ایک بھاری تودہ گر آیا بیکن نے محکمہ آر اینڈ بی سے مدد لیکر شام دیر اگرچہ سڑک کو بحال کیا تاہم شدید اور موسلادار بارشوں کے سبب سرحد پر واقع گائوں بیاڑی کے لوگوں شدید مشکلات سے دوچار ہوئے ہیں لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ گاوں کو ٹیٹوال سے ملانے والی واحد پکڈنڈی پسیاں اور پتھر گر آنے کے سبب منقطع ہو گئی ہے جس کے سبب بیاڑی کی آبادی گھروں میں ہی محصور ہے ۔ مقامی لوگوں کے مطابق بدھ کو کوئی بھی طالب علم بہاڑی سے ٹیٹوال سکول تک نہیں جا سکاہے اسی طرح پہاڑوں کے دامن میں آباد بستیاں جن میں ٹنگڈار ناڑ ہری ڈل ، تربونی ، کلٹھا ، جاڈہ امروہی سمیت دیگر کئی دیہات میں پتھر اور پسیاں گرنے آنے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں اس بیچ کرناہ انتظامیہ نے لوگوں سے تلقین کی ہے کہ وہ خراب موسم میں بالائی علاقوں کا سفر نہ کریں ادھر نستہ چھن گلی اور پھرکیاں ٹاپ پر تازہ برف باری کے چلتے کرناہ کپواڑہ شاہراہ سمیت کیرن کپواڑہ سڑک بھی مسلسل دوسرے روز بھی گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند رکھا گیا ہے ۔