کرسو راجباغ بنڈ پر آوارہ کتوں کی بھرمار

سرینگر //کرسو راج باغ بنڈ پر آوارہ کتوں کی موجودگی سے لوگوں میں خوف ودہشت پایاجارہا ہے اور مکین گھروں سے باہر نکلنے میں ڈر محسوس کررہے ہیں ۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ماڈرن ہسپتال سے لیکر شیخ محلہ کرسو راج باغ بنڈ تک صبح اور شام آوارہ کتوں کی ایک بڑی تعداد نے لوگوں کو گھروں میں محصور کر کے رکھا ہے جبکہ کتوں کو ٹھکانے لگانے کیلئے محکمہ مونسپل حکام کوئی بھی کارروائی عمل میں نہیں لاتا ۔ایک مقامی شہری سہیل احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ فجر اور عشاء کی نماز وں کی ادائیگی کیلئے مسجد نہیں جا سکتے ہیں جبکہ یہ کتے نہ صرف رات کو یہاں اپنا ڈھیرا جمائے بیٹھے ہوتے ہیں بلکہ دن میں بھی کتوں کی بڑی تعداد وہاں موجود کوڑا کرکٹ کے ڈھیر پر جمع ہوتی ہے جس سے سکولی بچوں کے ساتھ ساتھ راہگیروں کو بھی آمد ورفت کے درران مشکلات پیش آتی ہیں ۔مقامی لوگوں نے مونسپل حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ کتوں کو ٹھکانے لگانے کیلئے اقدمات کئے جائیں تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔کرسو راج باغ کے لوگوں نے اس دوران خاکروبوں پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ صبح کے وقت صرف چند منٹوں کیلئے ہی کوڑا کرکٹ جمع کرنے آتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ میونسپلٹی کی جو گاڑی صبح گھروں میں جمع ہوئے کوڑا کرکٹ کو لینے آتی ہے وہ صرف چند منٹوں کیلئے وہاں کھڑی رہتی جبکہ ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ یہ گاڑی وہاں کافی وقت تک رہتی تاکہ لوگ اپنے گھروں میں جمع کوڑا کرکٹ اُس میں ڈالتے اس وجہ سے کئی ایک لوگ کوڑا کرکٹ کو گاڑی میں ٹھکانے لگانے سے محروم رہ جاتے ہیں اور پھر بنڈ کے آس پاس اس کو ڈال دیتے ہیں جس سے وہاں بدبو پھیل رہی ہے ۔