کالج کے معاملے پر منجاکوٹ میں احتجاجی مظاہرہ

 منجاکوٹ //منجاکوٹ میں کالج کے قیام کی مانگ پر مقامی لوگوںنے احتجاجی مظاہرہ کیا جس کی وجہ سے جموں پونچھ شاہراہ پر ایک گھنٹہ تک ٹریفک کی نقل و حرکت متاثر رہی ۔ بڑی تعداد میں لوگ لوگ اور نوجوان سڑک پر جمع ہوئے اور انہوںنے حکومت کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے منجاکوٹ میں کالج قائم کرنے کی مانگ دہرائی ۔ اس موقعہ پر بولتے ہوئے این سی یوتھ صوبائی نائب صدر ایڈووکیٹ عبدالقاد رخان ، فاروق خان اور رائوف خان نے کہاکہ تحصیل منجاکوٹ کو ہر طرح سے نظر انداز کیاجارہاہے اور کالج کی منظوری نہ دیئے جانے سے یہ عیاں ہوجاتاہے کہ اس علاقے کے ساتھ حکومت کیسا سلوک کررہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ کالج نہ ہونے کی وجہ سے یہاں کے طلباء کو اپنی پڑھائی کو جاری رکھنے میں مشکلات کاسامنا کرناپڑتاہے اور غریب گھرانوں کے طلباء ترک تعلیم پر مجبور ہوتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ منجاکوٹ دور دراز علاقوں تک پھیلی ہوئی تحصیل ہے اور یہاں کے طلباء کیلئے دوسرے کالجوں میں جاکر تعلیم حاصل کرنا مشکل ہے ۔ انہوںنے کہاکہ وہ کئی سال سے کالج کی مانگ کررہے ہیں لیکن ہر بار وعدہ دے کر انہیں خاموش کردیاجاتاہے ۔ انہوںنے کہاکہ ان کے کالج کے نام پر سودا بازی کی جارہی ہے اور اگر مخلوط سرکار نے اس ادارے کاقیام عمل میں نہ لایاتو وہ بڑے پیمانے پر احتجاج کریںگے ۔