کئی سال سے چلاآرہا تنازعہ حل …پولیس و سیکورٹی فورسز کی موجودگی میں سڑک کاکام شروع

مینڈھر//کوٹاں ۔بی جی سڑک پر چلے آ رہے کئی سال کے تنازعہ کو انتظامیہ نے جمعرات کوحل کردیا۔ اس دوران انتظامیہ کی طرف سے سڑک نکالنے کے لئے پولیس و سی ار پی ایف کے جوان تعینات کئے ہوئے تھے تاکہ کسی قسم کا کوئی بڑا حادثہ پیش نہ آئے البتہ بدھوار شام کو انتظامیہ نے سڑک میں تنازعہ والے لوگوں سے بیٹھ کر بات چیت کی اور معاملہ طے ہوگیاتاہم انتظامیہ نے کوئی بھی خطرہ مول نہ لیتے ہوئے پولیس و سیکورٹی فورسز کی نفری تعینات کی ہوئی ہے ۔اس دوران پولیس نے اس علاقے میں کسی کو بھی نہیں آنے دیا جہاں تنازعہ چل رہاتھا۔ کوٹاں تا بی جی سڑک پر گزشتہ کئی سال سے تنازعہ بنا ہوا تھا اور جن لوگوں نے سڑک نکالنے پر اعتراض کیا ، ان کا کہنا تھا کہ سڑک کاکام جس جگہ سے شروع کرنا تھا وہ یہ جگہ یہ نہیں ہے بلکہ یہ سڑک دسویں کلو میٹر سے نکالنی ہے جس کے بعد اعتراض کرنے والے لوگ عدالت میں چلے گئے جہاں سے فیصلہ پی ایم جی اس وائی محکمہ کے حق میں ہوا لیکن چار سو میٹر سڑک نکالنے پر تنازعہ بنا رہا اورجمعرات کو سرکار کے ایک حکم نامے کے تحت ضلع و تحصیل انتظامیہ نے سڑک کاکام شروع کیا جس کو آخر پایہ تکمیل تک پہنچایا ۔اس دوران کام کی نگرانی ایس ڈی ایم مینڈھرر اہل یادو، تحصیلدار مینڈھر شہزاد لطیف خان،نائب تحصیلدار ہرنی آفتاب حسین شاہ، نائب تحصیلدار مینڈھر تعارف حسین شاہ کررہے تھے جبکہ پولیس کی طرف سے ایس ڈی پی او مینڈھر ریاض تانترے،ڈی ایس پی ڈی آر موہن لعل کے علاوہ ایس ایچ او مینڈھر عابد رفیقی بھی موقعہ پر موجودرہے۔ انتظامیہ نے اتنی بھاری نفری سڑک کو نکالنے کے لئے لگائی ہوئی تھی کے علاقہ ایک چھائونی کی طرح نظر آ رہا تھا۔تاہم خوش قسمتی سے تنائو کے باوجود کوئی بھی لڑائی جھگڑا نہیں ہوا اور سڑک پر امن طور پر نکالی گئی ۔اگرچہ لوگوں نے انتظامیہ کی بات پر اتفاق کیا تاہم انہوںنے یہ مانگ رکھی کہ انہیں اب لنک روڈ دی جائے جس کا انہیں یقین دلایاگیا۔