ڈی سی راجوری کا تھنہ منڈی میں عوامی دربار

تھنہ منڈی // ڈاک بنگلہ تھنہ منڈی میں ڈپٹی کمشنر راجوری راجیش کمار شاون نے عوامی دربار لگایا۔ ان کے ہمراہ ضلع انتظامیہ کے اعلیٰ آفیسران اور تحصیل انتظامیہ کے ساتھ ساتھ عوامی نمائندوں نے شرکت کی۔ ڈپٹی کمشنر راجیش کمار شاون نے عوامی دربار لگا کر عوام کے مسائل سنے۔ تھنہ منڈی میں آرہی پریشانی کے بارے میں لوگوں نے ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کیا۔ اس موقع پر عوام نے تعلیم، پانی، بجلی، سڑک ، بیروگاری ، مہنگائی، ہسپتال اور ڈسپنسری جیسی بنیادی سہولیات کو مزید مستعد اور فعال بنانے کا مطالبہ کیا۔ ڈی سی راجوری نے یقین دہانی کروائی کہ تمام مسائل حل کئے جائیں گے۔ عوامی دربار میں ضلع ترقیاتی کمشنر نے تمام محکموں کو ہدایت دی کہ وہ اپنے محکموں میں مرکزی سکیموں کے تعلق سے عوام میں بیداری پیدا کریں تاکہ لوگ ان سکیموں سے زیادہ سے زیادہ استفادہ کر سکیں۔ عوامی دربار میں تھنہ منڈی اور اس سے متصل علاقوں سے کثیر تعداد میں سرکردہ شخصیات، محلہ کمیٹیز اور ویلفیئر سوسائٹی نے شرکت کی اور ضلع انتظامیہ کو مختلف امور اور شکایات سے آگاہ کیا۔ شکایت کنندگان نے مسائل کو جلد سے جلد حل کرنے کیلئے ضلع ترقیاتی کمشنر سے مداخلت کا مطالبہ کیا۔اس موقع پر ضلع ترقیاتی کمشنر نے عوام کو یقین دلایا کہ ان کی تمام شکایات اور مسائل کو جلد از جلد حل کیا جائے گا۔ انہوں نے متعلقہ محکموں کو عوامی مسائل کو حل کرنے کے لئے اقدامات کرنے کی ہدایت جاری کرنے کے علاوہ متعدد مسائل کو موقع پر ہی حل کیا۔اپنے خطاب کے دوران ضلع ترقیاتی کمشنر نے اس بات کا اعادہ کیا کہ ضلع انتظامیہ عوام کے دروازوں پر بنیادی سہولیات کی فراہمی اور ان کے مسائل اور شکایات کا ازالہ کم سے کم وقت میں کرنے کے لئے پرعزم ہیں اور اس سلسلے میں پہلے ہی ضلع کے مختلف محکموں کے افسران کو ضروری ہدایات دی گئی ہیں۔آفیسر موصوف نے تمام محکموں کو ہدایت دی کہ وہ اپنے محکموں میں مرکزی معاونت والی سکیموں سے عوامی حلقوں میں بیداری پیدا کریں تاکہ وہ ان سکیموں سے استفادہ کریں، جو معاشرتی اور مالی حالت کو بہتر بنانے کے لئے منافع بخش ہیں۔ عوامی دربار میں ڈی ڈی سی ممبر عبدالقیوم میر، چئیرمین، تحصیلدار تھنہ منڈی، محکمہ صحت، محکمہ بجلی، جل شکتی، پی ایم جی ایس وائی، تعمیرات عامہ، امور صارفین و تقسیم کاری، تحصیلدار، بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر سمیت دیگر اعلیٰ افسران، عوامی نمائندوں، پنچوں اور سرپنچوں نے شرکت کی۔