ڈی ایف او پونچھ پر لوگوں کو ہراساں کرنے کا الزام

مینڈھر //سرپنچ گورسائی کے خاوند سبکدوش لیکچررنظیر حسین شاہ نے پنچایت کے ممبروں کے ہمراہ ڈی ایف او پونچھ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ آفیسر موصوف ان کو غیر ضروری طور پر ہراساں کررہا ہے ۔مینڈھر میں ایک پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے بتایا کہ وہ اپنے ایک مویشی خانے کی جگہ پر رہائشی مکان تعمیر کررہے ہیں تاہم محکمہ مال کی جانب سے جگہ کو ملکیت قرار دینے کے بعد بھی ان کو غیر ضروری طورپر ہراساں کیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ مویشی خانے کے قریب ہی چار دکانیں بھی تعمیر کی گئی ہیں تاہم ڈی ایف او پونچھ مبینہ طورپر ایک سبکدوش محکمہ جنگلات کے آفیسر کی شکایت پر ان کو ہراساں کررہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ڈی ایف او کی جانب سے جاری کردہ نوٹس کے بعد محکمہ مال کی جانب سے جگہ کی نشاندہی کی گئی تھی جس میں مذکورہ جگہ ان کی ملکیت نکلی تھی اور اس کے بعد ہی انہوں نے مذکورہ مقام پر رہائشی مکان تعمیر کیا ہے لیکن اب دوبارہ سے ان کیخلاف نوٹس جاری کئے جارہے ہیں ۔اس سلسلہ میں ڈی ایف او پونچھ نے بتایا کہ معاملہ تحصیلدار کے پاس ہے جبکہ تحصیلدار نے بتایا کہ اس سلسلہ میں تحقیقات کی جاری ہیں ۔پنچایتی اراکین نے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ معاملہ کی جانچ کر کے آفیسرکیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ۔