ڈیلی ویجروں کی ہڑتال کے پیش نظردھنورمیںپانی کی قلت کیخلاف احتجاج

 راجوری//قصبہ میں ڈیلی ویجروں کی ہڑتال کے پیش نظرنے پانی کی قلت کو لیکر احتجاج کیا ۔وارڈ نمبر02   میں آئی ٹی آئی کے نزدیک رہنے والے لوگوںاور دھنور علاقہ کے مکینوں نے پانی کی قلت کو لیکر جمعہ کے روز سڑک پر دھرنا دیکر ٹریفک کی آمد و رفت میں خلل ڈالی۔ دریں اثنا ، محکمہ صحت عامہ کے ڈیلی وئیجروں، کیجول ورکروں ۔زمین عطیہ دینے والے ورکروں اور آئی ٹی آئی کے تربیت یافتہ ورکروں نے اپنی احتجاج میں مزید تین دنوں کی توسیع کر دی ہے۔ موضع دھنور کے لوگوںنے کہا کہ ان کے علاقہ میں گُذشتہ کئی دنوں سے پانی کی سپلائی نہیں ہو رہی ہے، جس سے لوگوں کو گونا گوں پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔انہوں نے محکمہ صحت عامہ کے مستقل ملازمین پر لوگوں کے مسائل کو سنجیدگی سے نہ لینے کا بھی مبینہ الزام  لگایا ہے۔بعد ازان پولیس ٹیم اور متعلقہ محکمہ کے اہلکاروں نے جائے موقعہ پر جا کر مظاہرین کو سمجھایا بجھا یا اور انہیں مسلہ حل کرنے کی یقین دہانی کرتے ہوئے ٹریفک کو بحال کر دیا ۔احتجاج کی وجہ سے بابا غلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی کے سٹاف اور طلاب کو بھی کافی پریشانیوں کا مقابلہ کرنا پڑا ۔قصبہ میں آئی ٹی آئی  راجوری کے نزدیک مکینوں نے بھی پانی کی قلت کو لیکر احتجاج کیا۔انہوں نے مبینہ الزام لگایا ہے کہ گذشتہ سات دنوں سے انہیں پانی فراہم نہیں کیا جا رہا ہے انہوںنے محکمہ کے مستقل ملازمین پر ان کے مسلہ پر غیر سنجیدہ ہونے کا الزام لگایا ۔بعد ازاں پولیس او رمحکمہ صحت عامہ نے مظاہرین کو یقین دلایا کہ انکے مسلہ کا سد باب کیا جا ئے گا۔ جس پر مظاہرین نے اپنا احتجاج ختم کر دیا ۔دریں اثنا ، محکمہ صحت عامہ کے ڈیلی وئیجروں، کیجول ورکروں ۔زمین عطیہ دینے والے ورکروں اور آئی ٹی آئی کے تربیت یافتہ ورکروں نے اپنی احتجاج میں مزید تین دنوں کی توسیع کرنے کا اعلان کر دیا ہے اور سینئر افسروں کا انکے ریکارڈ اعلیٰ حکام کو نہ بھیجنے کی مذمت رکتے ہوئے انکے ساتھ کھلواڑ کرنے کاالزام لگایا ہے۔