ڈپٹی کمشنر نے راجوری میڈیکل کالج کے کام کا جائزہ لیا

راجوری//ریاستی گورنر کے مشیر بی بی ویاس کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر راجوری محمد اعجازاسد نے منگل کے روز ضلع میں کئی ترقیاتی پروجیکٹوں کا جائزہ لیا ۔اس دوران انہوں نے عبداللہ پل سے اپروچ روڈ، ضلع ہسپتال سرکولر روڈ، جی این ایم کالج اور گورنمنٹ میڈیکل کالج راجوری کی تعمیر کا جائزہ لیا ۔ڈپٹی کمشنر نے اپروچ سڑک اورسرکولر سڑک پر فوری طور پر تارکول بچھانے کی ہدایت دیتے ہوئے کہاکہ اس سے قصبہ میں جام کا مسئلہ حل ہوگا اور لوگوں کو آسانی ہوگی ۔انہوں نے گورنمنٹ میڈیکل کالج نگروٹہ راجوری کا دورہ کیا اور اس کالج کی انتظامی عمارت کی تعمیر کاجائزہ لیا ۔ یہ پروجیکٹ محکمہ تعمیرات عامہ کی طرف سے 139کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیاجارہاہے ۔ڈپٹی کمشنر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ کام میں تیزی لائیں اور اسے جون2019تک مکمل کیاجائے ۔موصوف نے جی این ایم سکول اور ہوسٹل کے جاری کام کا معائنہ بھی کیا جسے جموں وکشمیر پولیس ہائوسنگ کارپوریشن کی طرف سے 5.00کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیاجارہاہے ۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی کہ وہ اس کام کو مقررہ مدت کے اندر اندر مکمل کریں ۔دریں اثناء موصوف نے مدر و چائلڈ ہسپتال کا معائنہ بھی کیا جسے جموں و کشمیر ہائوسنگ بورڈ کی طرف سے 1.25کروڑ کی لاگت سے تعمیر کیاجارہاہے ۔اس موقعہ پر میڈیکل سپرانٹنڈنٹ نے ڈی سی کو بتایاکہ عمارت کاکام مکمل ہونے کے بعد ضلع ہسپتال کے گائنکالوجی اور پیڈریاٹرکس وارڈوں کو یہاں منتقل کیاجائے گا۔ڈپٹی کمشنر نے متعلقہ افسران کو ہدایت دی کہ وہ اس کام کو ایک ماہ کے اندر مکمل کریں ۔اس دوران موصوف نے جسمانی طور پر ناخیز افراد کیلئے سکل ڈیولپمنٹ سنٹر کے قیام کی جگہ کی نشاندہی کی ۔ڈی سی نے کہاکہ اس مرکز سے جسمانی طور پر ناخیز افراد کو اپنا روزگار کمانے کیلئے مدد ملے گی جہاں انہیں لازمی تربیت فراہم کی جائے گی ۔ڈی سی ودانت آشرم پل کاجائزہ بھی لیا جسے محکمہ تعمیرات عامہ کی طرف سے چھ کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیاجارہاہے ۔ انہوں نے حکام کو ہدایت دی کہ وہ اس پروجیکٹ کو مقررہ مدت میں پایہ تکمیل تک پہنچائیں ۔ان کے ہمراہ ایس ای تعمیرات عامہ ، اے سی ڈی راجوری اختر حسین قاضی ، ڈی پی او عبدالخبیر ، ایگزیکٹو انجینئر تعمیرات عامہ مشتاق رینہ ، اے ڈی پلاننگ بلال میر و دیگر افسران بھی تھے ۔