ڈوگرہ صدر سبھا نے عوامی مسائل اجا گر کئے

 جموں //ڈوگرہ صدر سبھا کی جانب سے جمعرات کے روز ایک اہم اجلاس زیر قیادت صدر ٹھاکور گلچین سنگھ چاڑک منعقد ہوا۔اجلاس میں ضلع رام بن کے ایک وفد نے چاڑک کو اپنے مسائل پیش سنائے۔ اجلاس میں متعدد دیگر ایسو سی ایشنوں نے بھی اپنے مسائل ابھارے ۔اجلاس میں بتایا گیا کہ قانون ساز اسمبلی تحلیل ہونے کے بعد اور دربار موو سرینگر چلے جانے کے بعد جموں خطہ کو حالات کے رحم و کرم پر چھڑا گیا ہے۔اجلاس میں بتایا گیا کہ مشیروں کے وقتاً فوقتاً دورے معمول کے مطابق نہیں ہوتے ہیں اور نہ ہی انکی تشہیر کی جاتی ہے،جس کی وجہ سے عوام ان مشیروں کے ساتھ ملاقات کرکے اپنے مسئل پیش نہیں کر سکتے ہیں ۔ناشری۔ رام بن سڑک کی کشادگی کرنے کے سب۔ کنٹریکٹروں کے ایک وفد نے زیر قیادت صدر ڈی ایس ایس رام بن دھرم چند گامون انڈیا کمپنی کی جانب سے اپنی ادائیگی روکنے کے مسائل کا اعادہ کیا،جس کے پاس18  سب۔کنٹریکٹروںکے 27.34کروڑ روپے بقایا ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ ضلع ترقیاتی کمشنر کے ساتھ منعقد کئے گئے اجلاس میں کمپنی نے ادائیگی کرنے کا وعدہ کیا تھا،تاہم ابھی تک کوئی ادائیگی نہیں کی گئی ہے بلکہ نئے سب ۔کنٹریکٹروں کو معمور کیا جا رہا ہے،جنھوں نے بھی سائٹ پر مشینری پہنچائی ہے۔سٹوڈنٹس یونین کے ایک وفد نے اقتصادی طور سے کمزور طبقوں (EWS)کے کوٹہ کو جاری رکنے کا مطالبہ کیا ،جنھوں نے NEETکوالیفائی کیا ہے۔اجلاس میں بتایا گیا کہ میڈیکل کونسل آف انڈیا نے ریاست کے لئے  EWS کوٹہ کے تحت 85میڈیکل اور 23 ڈینٹل نشستیں لااٹ کی ہیں،جو کہ سرکار کی لیت و لعل پالیسی سے خارج ہو رہی ہیں۔منشیات کی بدعت کے خلاف بولتے ہوئے اجلاس میں کہا گیا ہے کہ جموں ،اور سکے سرحدی اور کنڈی علاقوں میں منشیات فروشوں کو گرفتار کرنے کے لئے کوئی کاروائی نہیں کی جاتی ہے۔اجلاس میں بنکروں کی تعمیر میں سرعت لانے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔ڈی ایس ایس کے صدر گلچین سنمگھ چاڑک نے ان تمام مسائل کا سنگین نوٹس لیتے ہوئے حکام سے ان پر فوری طور کاروائی کرنے کی اپیل کی۔اجلاس میں پریم ساگر گپتا، ڈاکٹر ویریندر کے ساہی، ایم ایس جموال، گھمنبیر دیو سنگھ چاڑک، جنک کھجوریہ،و دیگران نے بھی شرکت کی،رام بن ڈی ایس ایس صدر دھرم چند کی قیادت میں وفد میں ٹھیکہ داراں کرشن لعل ،امجد علی، مظہر علی، اروند کھجوریہ، روی سنگھ ، عدبل مجید، سومدھر سنگھ ، گوپال سنگھ ،کرتار ناتھ، مسبر علی، صورم سنگھ ،سرتاج علی، نیاز احمد، بشارت علی، کرشن ،علی محمد ،عظم وانی اور سندیپ کمار بھی شامل تھے۔