ڈوڈہ کے پی ایچ ای ورکرس کا مظاہرہ

ڈوڈہ//محکمہ پی ایچ ای میں کام کررہے ڈیلی ویجرس و کیجول لیبرر س، آئی ٹی آئی ورکس و لینڈ ڈونرس نے اپنی مانگوں کو لے کر آج یہاں محکمہ پی ایچ دفتر ڈوڈہ و ڈپٹی کمشنر ڈوڈہ دفتر کے باہر زور دار مظاہرہ کیا۔ مظاہرین کی قیادت پی ایچ ای سی پی ورکرس ایسو سی ایشن چناب ویلی یونٹ ڈوڈہ کے چیئرمین محمد سلیم وانی کررہے تھے۔ اُنہوں نے سابقہ سرکار و گورنر انتظامیہ پر معاہدہ کی خلاف ورزی کرنے کا مبینہ الزام لگایا اور کہا کہ وہ ریگولرائزیشن پالیسی و بقایا تنخواہوں اور باقاعدگی سے ادائیگی جیسی مانگوں کو لے کر ایک لمبے عرصہ سے جدوجہد کررہے ہیں اور اب پچھلے کئی دنوں سے ہڑتالیں بھی کرتے آرہے ہیں۔ لیکن سرکار و انتظامیہ ان کی مانگوں کو لے کر سنجیدہ نہیں ہے۔ وانی نے کہا کہ سابقہ پی ڈی پی ، بھاجپا مخلوط سرکار نے محکمہ پی ایچ ای میں کام کررہے ڈیلی ویجرس و کیجول لیبرس، آئی ٹی آئی ورکس و لینڈ ڈونرس کیلئے ایس آر او 520کے تحت ریگولرائیزیشن پالیسی کا اعلان کیا تھا۔ جسے یکم اپریل 2018سے لاگو کرنے کی بات کی تھی لیکن گورنر انتظامیہ اس ایس آر او کے تحت ان کی ملازمت کو باقاعدہ بنانے کے عمل میں کوئی پیش رفت نہیں کرپائی ہے اور نہ ہی انہیں گذشتہ کئی کئی ماہ سے اجرتوں کی ادائیگی کی گئی ہے،جس کی  وجہ سے ان کے مشکلات بڑھتے جارہے ہیں اور انہیں ہڑتال پر جانے کیلئے مجبور ہونا پڑرہا ہے۔ وانی نے مزید کہا کہ اگر بقایا کئی ماہ کی اجرتوں کو ایک ہفتہ کے اندر وا گذار نہ کیا گیا تو 08اکتوبر2018کو ایک زور دار مظاہرہ کیاجائے گا جس میں آندولن کی آگے کی حکمت عملی کااعلان کیاجائیگا۔