ڈوڈہ میں سی پی ورکرس کا اِجلاس منعقد

ڈوڈہ//نیشنل ٹریڈ یونین فرنٹ کے ضلع صدر برکت علی کی صدارت میں سی پی ورکرس کا اِجلاس منعقد کیا گیا۔اِجلاس میں سی پی ورکرس کا کہنا تھا کہ ڈوڈہ کے عارضی ملازمین گزشتہ کئی ماہ سے تنخواہ کی عدم فراہمی سے فاقہ کشی کا شکار ہیں۔ برکت علی نے کہا کہ محکمہ صحت عامہ سے منسلک سی پی ورکرس گزشتہ کئی ماہ سے اجرت سے محروم ہیں جسکی وجہ اْن کے بچّے فاقہ کشی کا شکار ہیں اور تعلیم سے بھی محروم ہو رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ عید کو اب صرف چند یوم ہی باقی ہیں ایسے میں غریب مزدور سی پی ورکرس کیسے عید کا تہوار منا پائیں گے ۔دِن رات ڈیوٹی دینے کے باوجود اجرت کی مسلسل عدم فراہمی کہاں کا انصاف ہے اور سرکار بھی غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کرکے غریب سی۔پی۔ورکرس کے ساتھ ظلم کر رہی ہے ۔اْنہوں نے سرکار و متعلقہ محکمہ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ عید سے قبل سی۔پی۔ورکرس کی بقایا جات کو واگزار کیا جائے بصورت دیگر بڑے پیمانے پر احتجاج کیا جائے اور تمام سی۔پی ورکرس کام چھوڑ ہڑتال پر جائیں گے جیسا کہ موجودہ وقت میں معمول بن گیا ہے سی۔پی ورکرس نے سرکار کو انتباہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر عید سے قبل بقایا جات کو واگزار نہ کیا گیا تو وہ ضلع صدر برکت علی کی قیادت میں زور دار احتجاج کریں گے۔اِجلاس میں سی۔پی ورکرس کی بھاری تعداد نے شرکت کی جس میں نیشنل ٹریڈ یونین فرنٹ کے ضلع صدر کے علاوہ نائب صدر ،کیول کرشن ،جنرل سیکرٹری نریش کمار ،عطا محمد ،محمد یوسف ،ریکھا دیوی ،سائرہ بانو،مشتاق احمد وغیرہ شامل تھے۔