ڈوڈہ میںوزیراعلیٰ کی عوامی رابطہ مہم ،رات کے 2بجے تک عوامی شکایات سن لیں

ڈوڈہ//وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے پچھلی کئی دہائیوں میں ہونے والے اب تک کے سب سے بڑے عوامی استفسار کے دوران کل رات کے ڈیڑھ بجے تک ڈوڈہ میں عوامی دربار کے دوران وفود کے مطالبات اور شکایات کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔یہ کیمپ اتوار کو صبح ساڑھے دس بجے شروع ہوا اور رات گئے تک جاری رہا اور ڈوڈہ کے پلماس علاقے سے تعلق رکھنے والے وفد نے رات کے ایک بجکر 40منٹ پر اپنے مشکلات سے وزیرا علیٰ کو آگاہ کیا۔ وفد نے علاقے میں فٹ پاتھ تعمیر کرنے اور علاقے کو قصبے کے سرکیولر روڑ کے ساتھ جوڑنے کا مطالبہ وزیر اعلیٰ کے سامنے رکھا۔وزیر اعلیٰ نے لوگوں کے مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے وہاں فٹ پاتھ تعمیر کرنے کے لئے 15لاکھ روپے واگزار کرنے کا اعلان کیا۔انہوںنے وہاں بجلی اور پینے کے پانی کی سہولیات بہم کرانے کی بھی ہدایت دی۔عوامی رابطہ پروگرام کے دوران لگ بھگ 100وفود ملاقی ہوئے اور لوگوں کی بھاری تعداد کے مد نظر یہ سلسلہ رات دیر گئے تک جاری رہا اور اسے کئی دہائیوں میں اب تک ایک لمبا عوامی استفسار تصور کیا جاتا ہے۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ وزیر اعلیٰ کی طرف سے عوامی شکایات کے بارے میں جانکاری حاصل کرنے کے یہ کیمپ رات دیر گئے تک جاری رہے۔ سنیچر وار کو کشتواڑ میں منعقدہ عوامی دربار صبح 11بجے شروع ہوا اور رات کے ساڑھے 11بجے اختتام پذیر ہوا اور آخر پر درب شالہ سے تعلق رکھنے والے وفد نے اپنے مسائل وزیر اعلیٰ کی نوٹس میں لائے۔دریں اثنا ءنے ضلع ہسپتال ڈوڈہ کے لئے ایک ڈیجیٹل ایکسرے مشین خریدنے کے لئے 25لاکھ روپے کے علاوہ قصبے میں سٹیڈیم کا باقی ماندہ کام مکمل کرنے کے لئے 20لاکھ روپے واگزار کرنے کا اعلان کیا۔محبوبہ مفتی نے ضلع کے روٹ ۔بہوٹ اور بٹکنڈ دیہات میںکمیونٹی ہال تعمیرکرانے کا بھی اعلان کیا۔ وزیر اعلیٰ نے عوامی دربار کے دوران علاقے کے لوگوں کی طرف سے یہ مطالبات سامنے رکھنے کے تناظر میں یہ اعلان کیا۔