ڈوڈہ ضلع میں پی ایم جی ایس وائی کی ناقص کارکردگی | کاہرہ ٹانٹا سڑک پر ہورہے غیر معیاری کام پر عوام سراپا احتجاج

ڈوڈہ //پردھان منتری گرامین سڑک یوجنا (پی ایم جی ایس وائی) کی ناقص کارکردگی پر آئے روز ڈوڈہ ضلع میں عوام احتجاجی مظاہرے کرتی ہے تاہم حکام کی بار بار یقین دہانیوں کے بعد بھی کوئی تبدیلی نہیں آرہی ہے۔ادھر بدھ کے روز کاہرہ ٹانٹا سڑک پر دن بھر مقامی لوگوں نے احتجاج بلند کرتے ہوئے محکمہ پی ایم جی ایس وائی کی زیر نگرانی جاری تار کول بچھانے کے کام میں غیر معیاری مواد استعمال کرنے کا الزام عائد کیا۔ اس دوران مظاہرین نے پی جی ایس وائی کے خلاف نعرہ بازی کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ ایجنسی کی عدم توجہی سے سڑک پر غیر تسلی بخش کام ہورہا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے بھی کاہرہ گوئلہ سڑک پر ہوئے بلیک ٹاپ کے کام میں ناقص مواد کا استعمال کیا گیا تھا اور پھر عوامی مداخلت کے بعد دوبارہ تارکول بچھایا گیا تھا۔مقامی لوگوں کے مطابق تعمیراتی ایجنسی نے نکاسی نظام کے بنا تارکول بچھانے کا عمل شروع کیا جبکہ متعدد مقامات پر جمع ملبے کو بھی نہیں ہٹایا اور نہ ہی بند پڑے کلورٹ کو بحال کیا گیا۔ اس دوران پر بی ڈی سی چیئرمین کاہرہ فاطمہ چوہدری دیگر پنچائتی اراکین کے ہمراہ موقع پر پہنچی اور پی ایم جی ایس وائی کی زیر نگرانی ہورہے کام کو غیر تسلی بخش قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ ناقص مواد کے استعمال سے ایک دن میں ہی بیشتر حصے سے تارکول اکھڑ گیا ہے اور سڑک کی حالت پہلے سے زیادہ خستہ حال ہو چکی ہے۔بی ڈی سی چیئرمین نے کہا کہ سڑک پر ہوئے ناقص کام کی وجہ سے عوامی مشکلات میں اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے حکام سے متعلقہ محکمہ کو جوابدہ بنانے و ناقص کارکردگی کی بنیاد پر مذکورہ ایجنسی کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔ادھر تحصیلدار کاہرہ و پی ایم جی ایس وائی کے اے ای ای دیگر عملہ کے ہمراہ موقع پر پہنچے اور مظاہرین کو یقین دلایا کہ سڑک پر معیاری کام انجام دیا جائے گا اور کسی بھی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی جس کے بعد مظاہرین نے 8 گھنٹے بعد اپنا احتجاج ختم کیا۔تحصیلدار نے بی ڈی سی چیئرمین کی موجودگی میں پی ایم جی ایس وائی کو ہدائت دی کہ وہ سڑک کو بہتر بنانے کیلئے مثبت اقدامات کریں۔