ڈوڈہ اور بھدرواہ میں بھیانک آگ

بھدرواہ //موسم سرما کے دوران بالائی علاقوں میں آتشزدگیوں کا سلسلہ جاری ہے ، تازہ واقعات دیسہ ڈوڈہ اور بھدرواہ کے گجوٹھ علاقہ میں پیش آئے جہاں دو ڈھانچے جل کر راکھ ہو گئے۔گجوٹھ میں ایک گائو خانہ میں آگ لگ گئی اور نتیجہ کے طور پر 15بھیڑیں، دو بیل اور ایک گھوڑا زندہ جل کر ہلاک ہو گئے ۔ ایس ایچ او بھدرواہ منیر خان نے بتایا کہ دھتورہ گجوٹھ گائوں میں تیرتھ رام ولد فقیر چند کے گھر میں اچانک آگ بھڑک اٹھی اور اس سے پہلے کہ اس پر قابو پایا جا سکتا پورا گائو خانہ جل کر خاک کے ڈھیر میں تبدیل ہو گیااور 18مویشی جل گئے۔انہوں نے بتایا کہ عینی شاہدین کے مطابق یہ آگ مویشی باڑہ کو گرم رکھنے کیلئے جلائی آگ سے لگی اور آناً فاناً ملحقہ د و کمروں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ۔مویشی اپنے تھان پر بندھے ہوئے تھے جس کی وجہ سے وہ بھاگ نہ سکے اور شدید سردی کی وجہ سے آس پاس کے لوگ اپنے گھروں میں ہی محصور تھے اس لئے کوئی انہیں بچانے کے لئے بھی آگے نہ آسکا۔ دریں اثنا ڈوڈہ کے دیسہ بلاک میں شنکھلی کے مقام پر ایک دو منزلہ رہائشی مکان جل کر خاکستر ہو گیا ہے ۔ پولیس ذرائع کے مطابق امر چند کا پورا کنبہ شام کے وقت بخاری کے قریب بیٹھا ہوا تھا کہ اچانک ایک کمرے سے شعلے بلند ہونے لگے تو انہوں نے چیخ و پکار شروع کر دی ۔ اگر چہ آس پڑوس سے سبھی لوگ جمع ہو گئے اور آگ بجھانے کی کوشش شروع کر دی لیکن ان کی یہ کوششیں رائیگاں گئیں اور پورارہائشی ڈھانچہ مع مال و اسباب خاک ہو گیا۔ چونکہ یہ مکان سڑک سے 7کلو میٹر دور تھا اس لئے فائر برگیڈ کی گاڑی بھی وہاں نہ پہنچ سکی۔ علاقہ میں بجلی نہیں ہے اس لئے باور کیا جاتا ہے کہ بخاری کی آگ نے مکان کی لکڑی کو پکڑ لیا ہوگا۔