ڈاکٹر فاروق کی نتن گڈکری سے ملاقات

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے صدر اور ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے مرکزی وزیر برائے سڑک و ٹرانسپورٹ نتن گڈکری کے ساتھ ملاقات کی۔ دونوں نے ریاست جموں وکشمیر میں مختلف سڑک اور ٹنل پروجیکٹوں کے بارے میں تفصیل سے بات چیت کی۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے وزیر موصوف سے ریاست میں جاری پروجیکٹوں میں سرعت لانے کی اپیل کی۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے سادھنا ٹاپ اور گریز رازدان پاس کیلئے ٹنل پروجیکٹ ہاتھ میں لینے کی ضرورت پر زور دیا ا ور ساتھ اس بات کی بھی تاکید کی کہ زوجیلا ٹنل پر جاری کام کیلئے مقامی نوجوانوں کو فوقیت دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ٹنل پروجیکٹ شروع ہونے سے مقامی نوجوانوں کو اُمید لگائی تھی کہ انہیں روزگار کے مواقع فراہم ہونگے لیکن مقامی آبادی شکایت کررہی ہے کہ ٹنل کے کام کیلئے باہر سے مزدور لائے جارہے ہیں۔ یاد رہے کہ نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر اور مقامی ایم ایل اے میاں الطاف احمد نے ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی نوٹس میں یہ بات لائی تھی کہ زوجیلا ٹنل پر جاری کام میں مقامی نوجوانوں کو نظرانداز کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا تھا کہ زوجیلا ٹنل پر جاری کام کیلئے باہر سے مزدور لاکر ہمارے نوجوانوں کے حقوق پر شب خون مارا جارہاہے۔ یہاں کے بے روزگار نوجوانوں کو اُمید تھی کہ زوجیلا ٹنل پر کام شروع ہونے سے اُنہیں روزگار ملے گا لیکن باہر سے مزدور لاکر اُن کی اُمیدوں پر پھیر دیا۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے انہیں یقین دہانی کرائی تھی کہ وہ یہ معاملہ مرکزی وزیر کیساتھ اُٹھائیں گے۔