ڈاکٹر فاروق نے زیارت مخدوم صاحب ؒپرحاضری دی

سرینگر//نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کوہ ِ ماراں میں حضرت محبوب العالم شیخ حمزہ مخدوم کشمیریؒ کے آستان عالیہ پر حاضری دی اوراُن کے ہمراہ پارٹی کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر تھے۔ ڈاکٹر فاروق نے اس موقعہ پرکہا کہ بزرگانِ دین کے تبلیغ و اشاعت کی بدولت ہی ملک کشمیر کا چپہ چپہ اسلام کے نور سے منور ہوا، انہی اولیائے کرام کی بدولت ہمیں اسلام کی عظیم نعمت اور دولت نصیب ہوئی۔ ڈاکٹر فاروق نے کہا ہے کہ صہیونی طاقتیں اپنے ناپاک عزائم اور مسلمانوں کو پست کرنے کیلئے سازشیں رچا رہے ہیں اور ہم مسلمان ان سازشوں کا آسانی سے شکار بن رہے ہیں، آخر ایسا کیوں ہو رہا ہے؟ پوری دنیا میں مسلمان کیوں مارا مارا پھر رہا ہے ؟اس سب کا قصوروار اور کوئی نہیں بلکہ خود ہم ہیں، مسلمانوں میں آپسی اتحاد و اتفاق کا فقدان ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ قوموں کے عروج و زوال، سربلندی،ترقی و تنزلی،خوش حالی و فارغ البالی اور بد حالی میں اتحاد و اتفاق کا ہونا اور نہ ہونا کلیدی رول ادا کرتے ہیں۔ ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ آج دنیا میں ملت اسلامیہ پریشانِ حال اور مشکلات سے دوچار ہے، جس کی سب سے بڑی وجہ ہے کہ مسلمانوں میں جذبہ اخوت، ہمدردی، آپسی سوجھ بوجھ، اتحاد و اتفاق کا فقدان ہے،جب تک اُمت مسلمہ متحد تھی تب تک ہر ایک مسلم مملکت خوشحال اور ترقی یافتہ تھے۔ ڈاکٹر فاروق نے اہل ریاست سے اپیل کی کہ موجودہ نامساعد حالات کے پیش نظر خوف خدا میں رہ کر آزمائشوں سے نجات کی دعائیں مانگیں۔