ڈائریکٹرسکمز کے اختیارات کا خاتمہ ایک سازش: نگوا

سرینگر //سکمز نان گزٹیڈ ایمپلائز ایسوسی ایشن نے کہا ہے کہ شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ کے تقدس کو پامال کیا جارہا ہے اور ایک منصوبہ بند سازش کے تحت اس ادارے کی کارگردگی کو مسخ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ سکمز نان گزٹیڈ ایمپلائز ایسوسی ایشن کے صدر اشتیاق بیگ نے حیرانگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک طرف سرکار نے موجودہ ڈائریکٹر کی معیاد ملازمت میں 6ماہ کا اضافہ کردیا ہے اور دوسری جانب ان کے اختیارات کو ختم کردیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈائریکٹر کے اختیارات کو ختم کرنے کے باعث  بے حس و حرکت رہ گیا ہے جبکہ سرکار کے حکم نامہ کی وجہ سے ادارے میں خالی پڑی اسامیوں کو پر کرنے میں بھی دشواریاں پیدا ہوگئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سے یہ بات صاف ظاہر ہورہی ہے کہ ادارے کو بیروکریسی کے رحم و کرم پر چھوڑا گیا ہے، تاکہ یہ ادارہ اپنی آزادانہ حیثیت کھودے اور بعد میں اسکی کارکردگی پر سوالیہ نشان کھڑا کیا جاسکے۔ اشتیاق بیگ نے بتایا کہ جس طریقے سے سکمز صورہ نے عالمی وباء کے دوران لوگوں کا علاج کیا ہے ، اسکی تعمیری ملک کے سبھی طبی ادارے کرتے ہیں، اس کام  کو برقرار رکھنے کیلئے ڈائریکٹر سکمز صورہ کو با اختیار بنانے کی ضرورت ہے۔